Tuesday, 30 September 2014

Iss Gham Ko Tou Ab Dil Mein Samona He Parrey Ga

Sad Urdu Ghazals

اس غم کو تو اب دل میں سمونا ہی پڑے گا
آنکھیں جو بھر آئیں ہیں تو رونا ہی پڑے گا

وہ شخص مرادوں سے جسے پایا تھا ہم نے
محسوس یہ ہوتا ہے کہ کھونا ہی پڑے گا

اب جی کو جلاتے ہوئے اک عمر ہوئی ہے
اب ہم کو تیری طرح کا ہونا ہی پڑے گا

یہ ہجر کا موسم کہیں بےکار نہ ہو جائے
باقی جو بچا ہے اسے کھونا ہی پڑے گا

اس کشت ملامت میں مری جان زرا دیکھ
 .....یہ تخمِ محبت ہے کہ بونا ہی پڑے گا

Monday, 29 September 2014

Kuch Tou Badla Hai Sahib

Sad Shyri Collection

کچھ تو بدلا ہے صاحب
میں دنیا یا پھر تم

Sunday, 28 September 2014

Bujha K Rakh De Yeh Koshish Bohat Hawa Ki Thi

Sad Urdu Ghazals

بُجھا کے رکھ دے یہ کوشش بہت ہَوا کی تھی
مگر، چراغ میں کچھ روشنی انا کی تھی

مِری شِکست میں کیا کیا تھے مُضمَرات نہ پُوچھ
عدُو کا ہاتھ تھا، اور چال آشنا کی تھی

فقیہہِ شہر نے بے زار کر دیا، ورنہ
دِلوں میں قدر بہت خانۂ خُدا کی تھی

ابھی سے تم نے دُھواں دھار کر دیا ماحول
ابھی تو سانس ہی لینے کی اِبتدا کی تھی

شِکست وہ تھی، کہ جب میری سربُلندی کی
مِرے عدُو نے مِرے واسطے دُعا کی تھی

اب ہم غبارِ مہ و سال کے لپیٹ میں ہیں
....ہمارے چہرے پہ رونق کبھی بَلا کی تھی

Saturday, 27 September 2014

Yeh Saza Hai Rafoo Na Karney Ki

Best Saza Poetry

آج پیوند کی ضرورت ہے
یہ سزا ہے رفو نہ کرنے کی

Friday, 26 September 2014

Kho Chukey Hein JisKo Woh Jageer Lay Kar Kia Karen

Sad Urdu Poetry

کھو چکے ہیں جس کو وہ جاگیر لے کر کیا کریں
اک پرائے شخص کی تصویر لے کر کیا کریں

ہم زمیں زادے , ستاروں سے ہمیں کیا واسطہ
دل میں ناحق خواہش تسخیر لے کر کیا کریں

عالموں سے زائچے بنوائیں کس امید پر
خواب ہی اچھے نہ تھے تعبیر لے کر کیا کریں

اعتبارِ حرف کافی ہے تسلی کیلے
پکے کاغذ پر کوئی تحریر لے کر کیا کریں

اپنا اک اسلوب ہے ،اچھا برا جیسا بھی ہے
لہجۂ غالب ، زبان میر  لے کر کیا کریں

شمع اپنی  ہی  بھلی  لگتی ہے  اپنے طاق  پر
...مانگے تانگے کی کوئی تنویر لے کر کیا کریں

Thursday, 25 September 2014

Meri Tehreer Mein Liptay Huey Taboot Na Khol

Dard Bhari Shyri

میری تحریر میں لپٹے ہوئے تابوت نہ کھول
لفظ جی اٹھے تو تم خوف سے مر جاؤ گے

Wednesday, 24 September 2014

Mein So Gaya Tha Raat Kahani K Beech Mein

Pani K Beech

کشتی الٹ گئی میری پانی کے بیچ میں
میں سو گیا تھا رات کہانی کے بیچ میں

میرے تمہارے خواب پڑے ہیں یہیں کہیں
خواجہ سراؤ راجاؤ رانی  کے بیچ میں

جس بات سے گریز تھا شرط وصال شب
میں کہ گیا وہ بات روانی کے بیچ میں

بس اس لئے سنبھال کے رکھے ہیں تیرے خط
اک خواب  جاگتا ہے نشانی  کے بیچ میں

وہ اظطراب عشق تھا ہم دان کر گئے
....دل سی حسین چیز جوانی کے بیچ میں

Tuesday, 23 September 2014

Girtey Hein Sheh-Sawaar He Maidan-E-Jung Mein


Famous Urdu Poetry

گرتے ہیں شہسوار ہی میدانِ جنگ میں
وہ طفل کیا گرے گا جو گٹنوں  کے بل چلے

Monday, 22 September 2014

Lout Kar Waqt Na Aaya Meray Bachpan Ki Tarah

Best Bachpan Poetry

گھر بھی سونا ہے میری زیست کے آنگن کی طرح
لوٹ کر وقت نہ آیا میرے بچپن کی طرح

گردش وقت کے روندے ہوءے انسانوں کا
کوی مصرف نہیں ٹوٹے ہوءے برتن کی طرح

مجھ کو غربت نے ڈسا اس کو ہوس مار گءی
بک گیا وہ بھی بہر حال میرے فن کی طرح

آپ چھم سے جو تصور میں چلے آءے کبھی
دل دھڑکنے لگا بجتی ہوءی جھانجن کی طرح

کچھ میرا ذوق سماعت بھی بہک جاتا ہے
کچھ تیرے پاوں کی آہٹ بھی ہے دھڑکن کی طرح

کر کے گھاءل مجھے اس کا بھی برا حال ہوا
اس کی زلفیں بھی نہ سلجھیں میری الجھن کی طرح

جانے کیا بات ہے جلتا ہے حسد کرتا ہے
غم دنیا ، غم محبوب سے سوکن کی طرح

برق گرنے کا جہاں ناز بہت خطرہ تھا
.....ہم نے ڈالی اسی ڈالی پہ نشیمن کی طرح

Sunday, 21 September 2014

Hamari Umar Tumhare Bagair Beet Gai

Bewafa Urdu Poetry

خدا کا شکر، سہارے بغیر بیت گئی
ہماری عمر، تمہارے بغیر بیت گئی

Saturday, 20 September 2014

Mayaar Girta Na Doston Ka Na Hum Bhi Dushman Ki Dhaal Hotey

best Dhoka Poetry


معیار گرتا نه دوستوں کا
 نه هم بھی دشمن کی ڈھال هوتے
ضعیف دشمن پے وار کرتے
 تو وقت کے هم دجال هوتے

نهیں تھا اپنا مزاج ایسا 
که ظرف کھو کر انا بچاتے
ورنه ایسے جواب دیتے
 که پھر نه پیدا سوال هوتے

هماری فطرت کو جانتا هے
 تبھی تو دشمن یه که رها هے
هے دشمنی میں بھی ظرف ایسا
 جو دوست هوتے کمال هوتے

جو آ کے تم حال پوچھ لیتے 
تو اتنی لمبی نه عمر لگتی
که وصل کی اک گھڑی میں سارے 
گزر گئے ماه و سال هوتے

اسے مبارک مقام اونچا 
صحیح حقیقت همیں پتا هے
بناتے رشتوں کی هم بھی سیڑهی
 ............تو آسماں کی مثال هوتے

Friday, 19 September 2014

Daagh Dil Par Laga Liye Mein Ne

Daagh Poetry Collection

ﺍﺱ ﮐﮯ ﺩﺍﻣﻦ ﭘﮧ ﻟﮕﻨﮯ ﻭﺍﻟﮯ ﺗﻬﮯ
ﺩﺍﻍ ﺩﻝ ﭘﺮ ﻟﮕﺎ ﻟﯿﮯ ﻣﯿﮟ نے

Thursday, 18 September 2014

Mein Lay Gaya Tha Kashti Jahan Se Nikaal Kar

Dard Bhari Ghazal

میں لے گیا تھا کشتی جہاں سے نکال کر
لے جائیں پھر ھوائیں وھیں ٹھیل ٹھال کر

پھر باٹ اور ترازو اٹھا لائے ھیں عزیز
پہلے انہیں دکھا دوں وفا تول تال کر

مجھ کو ستا رھے ھیں شبِ غم کےشین غین
استاد کہہ رھے ھیں الف کو وصال کر

اک چڑیا رہ گئی ھے انا کے درخت پر
افلاس کہہ رہا ھے اسے بھی حلال کر

پھر میں نے پھول بوئے کنارے کی ریت میں
....مایوس ہو گیا تھا سمندر کھنگال کر

Wednesday, 17 September 2014

Uski Khamosh Hukmarani Hai

Best Love Poetry

میری ہر سوچ ہر تمنا پر
اس کی خاموش حکمرانی ہے

Tuesday, 16 September 2014

Honton Se Uska Lums Uthaya Tha Aur Bus

Best Romantic Poetry

ہونٹوں سے اُس کا لمس اٹھایا تھا اور بس
اک زلزلہ وجود میں آیا تھا اور بس

تیر و کماں بھی ٹھیک' نشانہ بھی ٹھیک تھا
دشمن مرے حصار میں آیا تھا اور بس

احسان اس پہ اتنا بڑا تو نہیں مِرا
دریا کو ڈوبنے سے بچایا تھا اور بس

مجھ کو خبر نہیں تھی کہ جل جائیں گے درخت
جنگل میں ایک اشک بہایا تھا اور بس

پھر روشنی اترنے لگی تھی وجود میں
..دیوان میر دل سے لگایا تھا اور بس

Monday, 15 September 2014

Log Badaltey Nahi Sahib


Bewafa Urdu poetry

لوگ بدلتے نہیں صاحب
بےنقاب ھوتے ھیں

Sunday, 14 September 2014

Koi Aandhi Ka Koi Hubs Ka Faryadi Hai

Best Faryaad Poetry

کوئ آندھی کا، کوئ حبس کا فریادی ہے
سانس لینے کی یہاں کس قدر آزادی ہے

یہ تماشا بھی دکھایا بڑے شہروں نے ہمیں
لوگ سمٹے ہوۓ ، پھیلی ہوئ آبادی ہے

جو خدو خال سے انسانوں کو پہچانتے ہیں
ہم نے ان تک تری آواز بھی پہنچادی ہے

اس کا ماتم نہ سہی ذکر تو کر سکتے ہیں
پس ِ دیوار ہمیں اتنی تو آزادی ہے

میں تری مدح تو کر سکتا ہوں،لیکن اس مٰیں
میرے فن ہی کی نہیں ،خلق کی بربادی ہے

مجھ کو یہ فکر ،کہیں تو نہ اکیلا رہ جاۓ
تجھ کو یہ زعم ، زمانہ ترا امدادی ہے

تیرے اور میرے ستارے جو نہیں ملتے ہیں
...تجھ میں اور مجھ میں کوئ فرق تو بنیادی ہے

Saturday, 13 September 2014

Teri Yeh Bhi MeharBani Teri Woh Bhi MeharBani

New Sad Poetry

کبھی پیغام الفت کبھی ہم سے بد گمانی
تیری یہ بھی مہربانی ، تیری وہ بھی مہربانی

Friday, 12 September 2014

In Aandhiyon Mein Tou Piyare Charagh Sab K Gaey

Ahmed Faraz Ghazals

  
    نظر بجھی تو کرشمے بھی روز و شب کے گئے
    کہ اب تلک نہیں نظر آئے ھیں لوگ جب کے گئے

    سنے گا کون تری بے وفائیوں کا گلہ
    یہی ھے رسم زمانہ تو ھم بھی اب کے گئے

    مگر کسی نے ھمیں ھمسفر نہیں جانا
    یہ اور بات کہ ھم ساتھ ساتھ سب کے گئے

    اب آئے ھو تو یہاں کیا ھے دیکھنے کیلیے
    یہ شہر کب سے ھے ویراں وہ لوگ کب کے گئے

    گرفتہ دل تھے مگر حوصلہ نہ ہارا تھا
    گرفتہ دل ھیں مگر حوصلے بھی اب کے گئے

    تم اپنی شمع تمنا کو رو رہے ھو فراز
    ...ان آندھیوں میں تو پیارے چراغ سب کے گئے

Thursday, 11 September 2014

Woh Yaad Aa Raha Hai Aaj Bhulaney K Baad Bhi

Best Yaad SMS

دل سے نہ مٹ سکا اک زمانے کے بعد بھی
وہ یاد آرہا ہے آج بھلانے کے بعد بھی

Wednesday, 10 September 2014

Itna Na Yaad Kar Usay Thakti Hai Yaad Bhi

Best Yaad Poetry


اِتنا نہ یاد کر اْسے تھکتی ہے یاد بھی
اے دل ذرا سنبھل کہ بہکتی ہے یاد بھی

دْوری تو اور پھول کھلاتی ہے قرب کے
ویرانے میں تو اور مہکتی ہے یاد بھی

تیرے ہی پاس ہوگا مرا گمشدہ سکوں
تیرے ہی اردگرد بھٹکتی ہے یاد بھی

سہما ہوا ہے دل کسی خوف ِگزشتہ سے
اب تو مرے بدن میں دھڑکتی ہے یاد بھی

بینائ تو غبار ہوئ انتظار میں
آنکھوں میں میری اب تو کھٹکتی ہے یاد بھی

کیسا ہجوم ِ درد ہے اے دل کہ ان دِنوں
دم بھی الجھ رہا ہے اٹکتی ہے یاد بھی

شاید وہ لوٹ آۓ کسی طور باغ میں
 ......طائر پکارتے ہیں چہکتی ہے یاد بھی

Tuesday, 9 September 2014

Saanu Dukh Di Qeemat Da Ki Pata Bhulya

Baba Bulley Shah

سانوں دُکھ دی قیمت دا کی پتہ بُھلیا
سانوں یاراں مُفت جو دے دتّے

Monday, 8 September 2014

Acha Hai Tujhe Khuwaab Dikhai Nahi Daitey

Best Khuwaab Poetry

میری طرح بیتاب دکھائ نہیں دیتے
یاروں کو مرے خواب دکھائ نہیں دیتے

ہْشیار رہو اپنے در و بام سے ہر پل
بربادی کے اسباب دکھائ نہیں دیتے

بہتی ہوئ ہر چیز نظر آتی ہے لیکن
آتے ہوۓ سیلاب دکھائ نہیں دیتے

آواز تو نزدیک سے آتی ہے اذاں کی
اور منبر و محراب دکھائ نہیں دیتے

اچھا ہے مجھے نیند میں چلنے کی ہےعادت
اچھا ہے تجھے خواب دکھائ نہیں دیتے

یہ دور عجب نامہؑ اعمال ہے محسن

...تحریر میں اعراب دکھائ نہیں دیتے

Meri Tarha Betaab Dikhai Nahi Daitey
Yaaron Ko Merey Khuwaab Dikhai Nahi Daitey

Hushyaar Raho Apne Dar-O-Baal Se Har Pal
Barbaadi K A'asbaab Dikhai Nahi Daitey

Behti Hui Har Cheez Nazar Aati Hai Lekin
Aatey Huey Sailaab Dikhai Nahi Daitey

Awaaz Tou Nazdeek Se Aati Hai Azaan Ki
Aur Mumbar-O-Mehraab Dikhai Nahi Daitey

Acha Hai Mujhe Neend Mein Chalney Ki Hai Aadat
Acha Hai Tujhe Khuwaab Dikhai Nahi Daitey

Yeh Dour Ajab Naama-E-Aamaal Hai Mohsin
Tehreer Mein A'araab Dikhai Nahi Daitey........

 Please Do Click g+1 Button If You Liked The Post  & Share It


Sunday, 7 September 2014

Dil La Ta'alluq Hai Sab Se


اک تیرے تعلق کی خاطر
دل لاتعلق ہے سب سے

Ik Terey Ta'alluq Ki Khatir
Dil La Ta'alluq Hai Sab Se

 Please Do Click g+1 Button If You Liked The Post  & Share It

Saturday, 6 September 2014

Mera Saya Teri Diwaar Se Ja Milta Hai


کہیں جنگل کہیں دربار سے جا ملتا ہے
سلسلہ وقت کا تلوار سے جا ملتا ہے

مِیں جہاں بھی ہوں مگر شہر میں دِن ڈھلتے ہی
میرا سایہ تِری دیوار سے جا ملتا ہے

تیری آواز کہیں روشنی بن جاتی ہے
تیرا لہجہ کہیں مہکار سے جا ملتا ہے

چودھویں رات تِری زلف میں ڈھل جاتی ہے
چڑھتا سورج تِرے رخسار سے جا ملتا ہے

گرد بھی وسعتِ صحرا میں سمٹ جاتی ہے
راستہ کوچہ و بازار سے جا ملتا ہے

رام ہر چند کیٔ لوگ بچھڑ جاتے ہیں
.....قافلہ، قافلہ سالار سے جا ملتا ہے


Keheen Jungle Kaheen Darbaar Se Ja Milta Hai
Silsila Waqt Ka Talwaar Se Ja Milta Hai

Mein Jahan Bhi Hoon Magar Shehar Mein Din Dhaltey He
Mera Saya Teri Diwaar Se Ja Milta Hai

Teri Awaaz Kaheen Roshni Ban Jati Hai
Tera Lehja Kaheen Mehkaar Se Ja Milta Hai

Chohdwee'n Raat Teri Zulf Mein Dhal Jati Hai
Charrhta Sooraj Teray Rukhsaar Se Ja Milta Hai

Gard Bhi Wus'at-E-Sehra Mein Simat Jati Hai
Raasta Koocha-O-Bazaar Se Ja Milta Hai

Raam Har Chund Kai Log Bicharr Jatay Hein
Qaafla, Qaafla Salaar Se Ja Milta Hai ...........

 Please Do Click g+1 Button If You Liked The Post  & Share It