Sunday, 31 August 2014

Aao Dhoondein Kaheen Darwaish Duaaon Walay

Best Dua Poetry

شہر کی دھوپ سے پوچھیں کبھی گاؤں والے
کیا ہوئے لوگ وہ زلفوں کی گھٹاؤں والے

اب کے بستی نظر آتی نہیں اُجڑی گلیاں
آؤ ڈھونڈیں کہیں درویش دعاؤں والے

سنگزاروں میں مرے ساتھ چلے آئے تھے
کتنے سادہ تھے وہ بلّور سے پاؤں والے

ہم نے ذرّوں سے تراشے تری خاطر سورج
اب زمیں پر بھی اتر زرد خلاؤں والے

کیا چراغاں تھا محبت کا کہ بجھتا ہی نہ تھا
کیسے موسم تھے وہ پُر شور ہواؤں والے

تُو کہاں تھا مرے خالق کہ مرے کام آتا
مجھ پہ ہنستے رہے پتھر کے خداؤں والے

ہونٹ سی کر بھی کہاں بات بنی ہے محسن
 ......خامشی کے سبھی تیور ہیں صداؤں والے


Shehar Ki Dhoop Se Poochein Kabhi Gaao’n Walay
Kia Huey Log Woh Zulfon Ki Ghataaon Walay

Ab K Basti Nazar Aati Nahi Ujrri Galyaan
Aao Dhoondein Kaheen Darwaish Duaaon Walay

Sang-Zaaron Mein Merey Sath Chalay Aaey Thay
Kitney Sada'h Thay Woh Bullawar Se Paaon Walay

Hum Ne Zarron Se Tarashay Teri Khatir Sooraj
Ab Zameen Par Bhi Utar Zard Khalaaon Walay

Kia Charaghan Tha Mohabbat Ka Ke'h Bujhta He Na Tha
Kaisay Mosam Thay Woh Pur Shor Hawaaon Walay

Tu Kahan Tha Merey Khaliq Ke'h Merey Kaam Aata
Mujh Pe Hanstey Rahey Pathar K Khudaaon Walay

Hont See Kar Bhi Kahan Baat Bani Hai Mohsin
Khaamshi K Sabhi Taiwar Hein Sadaaon Walay......


 Please Do Click g+1 Button If You Liked The Post  & Share It

Saturday, 30 August 2014

Tum Se Tou Achay Merey Dushman Niklay

Best Bewafa Poetry

ﺗﻢ ﺳﮯ ﺗﻮ ﺍﭼﮭﮯ ﻣﯿﺮﮮ ﺩﺷﻤﻦ ﻧﮑﻠﮯ
ﺟﻮ ﮨﺮ ﺑﺎﺕ ﭘﮧ ﮐﮩﺘﮯ ﮨﯿﮟ ﺗﺠﮭﮯ ﻧﮩﯿﮟ ﭼﮭﻮﮈﯾﮟ ﮔﮯ

  Tum Se Tou Achay Merey Dushman Niklay
  Jo Har Baat Mein Kehte Hein Tujhe Chorrei’n Gay Nahi

 Please Do Click g+1 Button If You Liked The Post  & Share It

Friday, 29 August 2014

Rehne De Rat-Jagon Mein Pareshan Mazeed Usay

Behtareen Urdu Ghazals

رہنے دے رتجگوں میں پریشاں مزید اُسے
لگنے دے ایک اور بھی ضربِ شدید اُسے

جی ہاں ! وہ اِک چراغ جو سُورج تھا رات کا
تاریکیوں نے مِل کے کِیا ہے شہید اُسے

فاقے نہ جُھگیوں سے سڑک پر نکل پڑیں
آفت میں ڈال دے نہ یہ بحرانِ عید اُسے

فرطِ خُوشی سے وہ کہیں آنکھیں نہ پھوڑ لے
آرام سے سناؤ سحر کی نوید اُسے

ہر چند اپنے قتل میں شامل وہ خُود بھی تھا
پھر بھی گواہ مل نہ سکے چشم دید اُسے

بازار اگر ہے گرم تو کرتب کوئی دِکھا!
سب گاہکوں سے آنکھ بچا کر خرید اُسے

مدت سے پی نہیں ہے تو پھر فائدہ اُٹھا
وہ چل کے آ گیا ہے تو کر لے کشید اُسے

مشکُوک اگر ہے خط کی لکھائی تو کیا ہوا
.....جعلی بنا کے بھیج دے تو بھی رسید اُسے


Rehne De Rat-Jagon Mein Pareshan Mazeed Usay
Lagney De Aik Aur Bhi Zarb-E-Shadeed Usay

G Han ! Woh Ik Charaag Jo Sooraj Tha Raat Ka
Tareekiyon Ne Mil K Kiya Hai Shaheed Usay

Faqay Na Jhuggiyon Se Sarrak Par Nikal Parrei'n
Aafat Mein Daal De Na Yeh Hijran-E-Eid Usay

Fart-E-Khushi Se Woh Kaheen Aankhein Na Phorr Lay
Aaraam Se Sunao Sehar Ki Naveed Usay

Har Chand Apne Qatal Mein Shamil Woh Khud Bhi Tha
Phir Bhi Gawah Na Mil Sakay Chashm-E-Deed Usay

Bazaar Agar Hai Garm  Tou Kartab Koi Dikha
Sab Gaahakon Se Aankh Bacha Kar Khareed Usay

Muddat Se Pee Nahi Hai Tou Phir Faaida Utha
Woh Chal K Aagaya Hai Tu Kar Lay Kasheed Usay

Mashkook Agar Hai Khat Ki Likhaie Tou Kia Hua
Ja'ali Bana K Bhaij Day Tu Bhi Raseed Usay.........

 Please Do Click g+1 Button If You Liked The Post  & Share It

Thursday, 28 August 2014

Hum Ko Manzoor Nahi Phir Se Bichharrne Ka Azaab

Best Judai Poetry

ہم کو منظور نہیں پھر سے بچھڑنے کا عذاب
اس لیے تجھ سے ملاقات نہیں چاہتے ہیں

Hum Ko Manzoor Nahi Phir Se Bichharrne Ka Azaab
Iss Liye Tujhse Mulaqaat Nahi Chahtey Hein

Please Do Click g+1 Button If You Liked The Post & Share It

Wednesday, 27 August 2014

Ay Ishq Tu Ne Hum Ko Sanbhalney Nahi Diya

Best Ishq Ghazals

اپنا مزاجِ کار بدلنے نہیں دیا
دل نے کوئی نظام بھی چلنے نہیں دیا

اے ماہتابِ حسن ہمارا کمال دیکھ
تجھ کو کسی بھی رنگ میں‌ڈھلنے نہیں دیا

گردش میں‌ہم رہے ہیں تو اپنا قصور کیا
تو نے ہمیں‌کشش سے نکلنے نہیں دیا

گریہ کیا تو آنکھ میں بھرتا گیا دھواں
دل نے متاعِ درد کو جلنے نہیں دیا

نظروں سے اپنی آپ ہی گرتے گئے ہیں ہم
اے عشق تو نے ہم کو سنبھلنے نہیں دیا

تھوڑی سی وضع داری تو اس دل کے واسطے
تو نے تو اس میں وہم بھی پلنے نہیں دیا

تہذیب اپنی کی ہے محبت نے سعد یوں
 .....اس دل کو ہم نے حد سے نکلنے نہیں دیا


Apna Mijaz-E-Kaar Badalney Nahi Diya
Dil Ne Koi Nizaam Bhi Chalney Nahi Diya

Ay Mahtaab-E-Husn Hamara Kamaal Daikh
Tujhko Kisi Bhi Rung Mein Dhalney Nahi Diya

Gardish Mein Hum Rahein Hein Tou Apna Qusoor Kia
Tu Ne Hamei'n Kashish Se Nikalney Nahi Diya

Girya Kia Tou Aankh Mein Bharta Gaya Dhuwaan
Dil Ne Mata-E-Dard Ko Jalney Nahi Diya

Nazron Se Apni Aap He Girtey Gaey Hein Hum
Ay Ishq Tu Ne Hum Ko Sanbhalney Nahi Diya

Thorri Si Waz'aa Daari Tou Is Dil K Waastey
Tu Ne Tou Iss Mein Weham Bhi Palney Nahi Diya

Tehzeeb Apni Ki Hai Mohabbat Ne Saad Youn
Iss Dil Ko Hum Ne Had Se Nikalney Nahi Diya.....

 Please Do Click g+1 Button If You Liked The Post  & Share It

Tuesday, 26 August 2014

Iss Tarha Liye Phirtey Hein Uski Mohabbat Ko Hum

Best Sad Poetry

اس طرح لیے پھرتے ہیں اس کی محبت کوہم
ٹوٹا ہوا بازو جیسے سینے سے لگا ہو

Iss Tarha Liye Phirtey Hein Uski Mohabbat Ko Hum
Toota Hua Baazoo Jaisay Seenay Se Laga Ho

 Please Do Click g+1 Button If You Liked The Post  & Share It

Monday, 25 August 2014

Aanchal Ko Ghoongat Kar Jana Ab Ki Baar Jo Aao Tum

Best Love Ghazals

آنچل کو گھونگٹ کر جانا اب کی بار جو آؤ تم
مانگ میں خود سیندور لگانا اب کی بار جو آؤ تم

کان کا بالا چھیڑ رہا ہے گال کو ہولے ہولے سے
اس کو محبت سے سجانا اب کی بار جو آؤ تم

دیکھ کے اپنی سونی کلائی، مَن میں ہوک سی اُٹھتی ہے
چوڑیاں اور کنگن پہنانا اب کی بار جو آؤ تم

نٹ کھٹ سکھیاں چھیڑتی ہیں کہ ساجن تم کو بھول گیا
دیکھو اُن کو خوب ستانا اب کی بار جو آؤ تم

کاگا چھت پر روز سے بولے، آنگن پھر بھی سُونا ہے
دیکھو اب واپس مت جانا اب کی بار جو آؤ تم

لٹ اُلجھی نے ماتھے کی بندیا کو بھی الجھا ڈالا
 ........ جُلمی، اس کو بھی سُلجھانا، اب کی بار جو آؤ تم


Aanchal Ko Ghoongat Kar Jana Ab Ki Baar Jo Aao Tum
Maang Mein Khud Sundoor Lagana Ab Ki Baar Jo Aao Tum

Kaan Ka Bala Chaiarr Raha Hai Gaal Ko Holey Holey Se
Iss Ko Mohabbat Se Sajana Ab Ki Baar Jo Aao Tum

Dekh K Apni Sooni Kalai, Mann Mein  Hook Si Uth'ti Hai
Chorriyaan Aur Kangan Pehnana Ab Ki Baar Jo Aao Tum

Nut Khat Sakhyaan Chairrti Hein K Sajan TumKo Bhool Gaya
Dekho Un Ko Khoob Satana Ab Ki Baar Jo Aao Tum

Kaaga Chhat Par Zor Se Bolay, Aangan Phir Bhi Soona Hai
Dekho Ab Wapas Mat Jana Ab Ki Baar Jo Aao Tum

Lat Uljhi Ne Mathay Ki Bindiya Ko Bhi Uljha Dala
Julni, Is Ko Bhi Suljhana, Ab Ki Baar Jo Aao Tum .......


Please Do Click g+1 Button If You Liked The Post & Share It

Sunday, 24 August 2014

Umar Saari Bahaar Ho Jaey

Best Romantic Poetry

تو میسر ھو ایک لمحے کو 
عمر ساری بہار ھو جاۓ

Tu Muyassar Ho Aik Lamhay Ko
Umar Saari Bahaar Ho Jaey

Please Do Click g+1 Button If You Liked The Post & Share It

Saturday, 23 August 2014

Woh Dil Mein Merey Ghaat Laga Kar He Rahey Ga

Best Romantic Poetry

وہ دل میں مرے گھات لگا کر ہی رہے گا
جذبات میں ہلچل سی مچا کر ہی رہے گا

ہر بات میں تکرار کی عادت کے سبب وہ
رشتے میں کوئی چھید بنا کر ہی رہے گا

کہتا ہے، مجھے چاند کو چھونے کی ہے خواہش
اک روز زمیں پر اسے لا کر ہی رہے گا

کچا ہے گھروندا مرا، بادل بھی ہے ضد میں
لگتا ہے کوئی کام دکھا کر ہی رہے گا

گرتی ہے تو سو بار گرے، اُس کی بلا سے
وہ ریت کی دیوار بنا کر ہی رہے گا

شک روگ ہے یہ دل کو اگر چھو لے تو سمجھو
 ............ بُنیاد وہ اس گھر کی ہلا کر ہی رہے گا



Woh Dil Mein Merey Ghaat Laga Kar He Rahey Ga
Jazbaat Mein Hulchal Si Macha​ Kar He Rahey Ga

Har Baat Mein Takraar Ki Aadat K Sabab Woh
Rishtey Mein Koi Chhaid Bana Kar He Rahey Ga

Kehta Hai, Mujhe Chaand Ko Chhoone Ki Hai Khuwahish
Ik Roz Zameen Par Usay Laa Kar He Rahey Ga

Kacha Hai Gharonda Mera, Badal Bhi Hein Zid Mein
Lagta Hai Koi Kaam Dikha Kar He Rahey Ga

Girti Hai Tou So Baar Giray , Us Ki Bala Se
Woh Rait Ki Diwaar Bana Kar He Rahey Ga

Shak Rog Hai Yeh Dil Ko Agar Chhoo Lay Tou Samjho
Bunyaad Woh Iss Ghar Ki Hila Kar He Rahey Ga...........

Please Do Click g+1 Button If You Liked The Post & Share It

Friday, 22 August 2014

Hum Log Zindagi Ko Dikhaie Nahi Diye

Best Udas Poetry

کُچلے ہُؤوں کو اور کُچلتی چلی گئی
ہم لوگ زندگی کو دِکھائی نہیں دِئیے

Kuchlay Huwon Ko Aur Kuchalti Chali Gai
Hum Log Zindagi Ko Dikhaie Nahi Diye

 Please Do Click g+1 Button If You Liked The Post  & Share It

Thursday, 21 August 2014

Zehan Se Dil Ka Baar Utra Hai

New Sad Poetry
  
    ذہن سے دل کا بار اترا ہے
    پیرہن تار تار اترا ہے

    ڈوب جانے کی لذّتیں مت پوچھ
    کون ایسے میں پار اترا ہے؟

    ترک مئے کر کے بھی بہت پچھتائے
    مدّتوں میں خُمار اترا ہے

    دیکھ کر میرا دشتِ تنہائی
    رنگِ رُوئے بہار اترا ہے

    پچھلی شب چاند میرے ساغر میں
    .......پے بہ پے، بار بار اترا ہے


Zehan Se Dil Ka Baar Utra Hai
Pairhan Taar Taar Utra Hai

Doob Janay Ki Lazatei'n Mat Pooch
Kon Aisay Mein Paar Urta Hai?

Tark Maiy Kar K Bhi Bohat Pachtaey
Muddaton Mein Khumaar Utra Hai

Dekh Kar Mera Dasht-e-Tanhai
Rung Roey Bahaar Utra Hai

Pichli Shab Chaand Mere Sagar Mein
Pay Ba Pay , Baar Baar Utra Hai.......

 Please Do Click g+1 Button If You Liked The Post  & Share It

Wednesday, 20 August 2014

Samajhtey Kiun Nahi Ho Baat Meri

Best Love Poetry

مجھے تیری بھی ضرورت ھے
سمجھتے کیوں نہیں ھو بات میری

Mujhe Teri Bhi Zaroorat Hai
  Samajhtey Kiun Nahi Ho Baat Meri


Please Do Click g+1 Button If You Liked The Post & Share It

Tuesday, 19 August 2014

Teray Asar Se Nikalney K So Waseelay Kiye

Latest Sad Ghazals

ترے اثر سے نکلنے کے سو وسیلے کیے
مگر وہ نین کہ تو نے تھے جو نشیلے کیے

ترے  خیال  نے  دل  سے  اٹھائے  وہ  بادل
پھر اس کے بعد مناظر جو ہم نے گیلے کیے

ابھی  بہار  کا  نشہ  لہو  میں  رقصاں تھا
کفِ خزاں نے ہر اک شے کے ہات پیلے کیے

اُدھر تھا جھیل سی آنکھوں میں آسمان کا رنگ
اِدھر خیال  نے  پنچھی  تمام  نیلے  کیے

محبتوں‌ کو  تم  اتنا  نہ  سرسری لینا
محبتوں نے صف آرا کئی قبیلے کیے

یہ  زندگی  تھی کہ تھی  ریت میری مٹھی میں
جسے بچانے کے دن رات میں‌نے حیلے کیے

کمالِ نغمہ گری میں‌ہے فن بھی اپنی جگہ
 .......مگر  یہ  لوگ کسی  درد نے  سریلے کیے


Teray Asar Se Nikalney K So Waseelay Kiye
Magar Woh Nain Ke'h Tu Ne Thay Jo Nasheelay Kiye

Teray Khayal Ne Dil Se Uthaey Woh Badal
Phir Us K Baad Manazir Jo Hum Ne Geelay Kiye

Abhi Bahaar Ka Nasha Lahoo Mein Raqsaan Tha
Kaf-E-Khizaan Ne Har Ik Shay K Hath Peelay Kiye

Udhar Tha Jheel Si Aankhon Mein Aasaan Ka Rung
Idhar Khayaal Ne Panchhi Tamaam Neelay Kiye

Mohabbaton Ko Tum Itna Na Sar-Sari Laina
Mohabbaton Ne Saf-E-Aara Kai Qabeelay Kiye

Yeh Zindagi Thi K Thi Rait Meri Muthi Mein
Jisay Bachaney K Din Raat Mein Ne Heelay Kiye

Kamal-E-Nagma Gari Mein Hai Fun Bhi Apni Jagah
Magar Yeh Log Kis Dard Ne Sureelay Kiye.....

 Please Do Click g+1 Button If You Liked The Post  & Share It

Monday, 18 August 2014

Lo Kisi Aur K Huey Hum Bhi

bEST jUDAI pOETRY

لو کسی اور کے ہوئے ہم بھی
آج اس کا غرور ٹوٹے گا

Lo Kisi Aur K Huey Hum Bhi
Aaj Us Ka Ghuroor Tootay Ga

Please Do Click g+1 Button If You Liked The Post & Share It

Sunday, 17 August 2014

Dil Se Koi Bhi Ehad Nibhaya Nahi Gaya

Best Wada Poetry

دل سے کوئی بھی عہد نبھایا نہیں گیا
سر سے جمالِ یار کا سایہ نہیں گیا

کب ہے وصالِ یار کی محرومیوں‌کا غم
یہ خواب تھا سو ہم کو دکھایا نہیں گیا

میں جانتا تھا آگ لگے گی ہر ایک سمت
مجھ سے مگر چراغ بجھایا نہیں گیا

وہ شوخ آئینے کے برابر کھڑا رہا
مجھ سے بھی آئینے کو ہٹایا نہیں گیا

ہاں ہاں نہیں ہے کچھ بھی مرے اختیار میں
ہاں ہاں وہ شخص مجھ سے بھلایا نہیں گیا

اڑتا رہا میں دیر تلک پنچھیوں کے ساتھ
 ......اے سعد مجھ سے جال بچھایا نہیں گیا


Dil Se Koi Bhi Ehad Nibhaya Nahi Gaya
Sar Se Jamal-E-Yaar Ka Saya Nahi Gaya

Kab Hai Visal-E-Yaar Ki Mehromiyon Ka Gham
Yeh Khuwaab Tha So Hum Ko Dikhaya Nahi Gaya

Mein Janta Tha Aag Lagay Gi Har Aik Simt
Mujhse Magar Charaag Bujhaya Nahi Gaya

Woh Shokh Aaienay K Barabar Kharra Raha
Mujhse Bhi Aaienay Ko Hataya Nahi Gaya

Han Han Nahi Hai Kuch Bhi Mereay Ikhtiyaar Mein
Han Han Woh Shakhs Mujhse Bhulaya Nahi Gaya

Urrta Raha Mein Dair Talak Panchiyon K Sath
Ay Saad Mujh Se Jaal Bichaya Nahi Gaya........

 Please Do Click g+1 Button If You Liked The Post  & Share It

Saturday, 16 August 2014

Koi Soorat Nikaal Jeenay Ki

Best Dard Poetry

کوئی صورت نکال جینے کی
تھک گیا ہوں میں سانس لے لے کر


Koi Soorat Nikaal Jeenay Ki
Thak Gaya Hoon Mein Saans Lay Lay Kar


Please Do Click g+1 Button If You Liked The Post & Share It

Friday, 15 August 2014

Mohabbat Rog Hai Janaa

Best Sad Poems

     محبت روگ ہے جاناں
    عجب سنجوگ ہے جاناں
    بڑا ہی جوگ ہے جاناں
    بڑے بوڑھے بتاتے تھے
    کئی قصے سناتے تھے
    مگر ہم مانتے کب تھے
    یہ سب جانتے کب تھے
    یہ باتیں ذکر کے قابل
    بھلا گردانتے کب تھے
    انا کے تخت پر بیٹھے ہمیں معلوم ہی کب تھا
    انا کے تخت سے اوپر،بہت بلندی پر
    کہیں پریوں کے جھرمٹ میں تیری پائل وہ پاؤں میں
    تیری زلفوں کی چھاؤں میں تیرے چھوٹے سے گاؤں میں
    ستارے،چاند،سورج والہانہ رقص کرتے ہیں
    ہمیں کب علم تھا جاناں
    تیرے قدموں کی آہٹ پر،گلابی مسکراہٹ پر
    تیرے ابرو کی جنبش پر،تیرے سر کے اشارے پر
    صدائے دلبرانہ پر نگاہِ قاتلانہ پر
    ادائے قریضانہ پر،جفائے مجرمانہ پر
    چمن کے پھول سارے اس طرح دھیان دیتے ہیں
    ذرا سے وصل کے جھانسے میں اپنی جان دیتے ہیں
    ہمیں ادراک ہی کب تھا جاناں
    تیرے پیکر میں ڈھل کر چاندنی ہر سو بکھرتی ہے
    شبِ مہتاب کی درشندگی کیسے نکھرتی ہے
    ہمیں کب علم تھا جاناں
    ہمیں کامل بھروسہ تھا۔۔۔
    کہ۔۔۔۔
    ہمارے ساتھ ایسا کبھی نہیں ہوگا
    دلِ دانا کبھی قابو سے بے قابو نہیں ہوگا
    یہ دنیا در دنیا دار سے سادھو نہیں ہوگا
    مگر پھر یوں ہوا جاناں! نجانے کیوں ہوا جاناں
    بڑا افسوس ہوا جاناں! جگر کا خون ہوا جاناں
    تیری ابرو کی جنبش کے قائل ہوگئے ہم بھی
    بڑے بے ملتفت پھرتے تھے مائل ہو گئے ہم بھی
    سخاوت کرنے آئے تھے اور سائل ہو گئے ہم بھی
    بڑے بوڑھوں کی ان باتوں کے قائل ہوگئے ہم بھی
    کہ۔۔
    محبت روگ ہے جاناں
      .............. عجب سنجوگ ہے جاناں


Mohabbat Rog Hai Janaa
Ajab Sanjog Hai Janaa
Barra He Jog Hai Janaa
Barray Boorreh Batatey Thay
Kai Qissay Sunatey Thay
Magar Hum Maantey Kab Thay
Yeh Sab Jantey Kab Thay
Yeh Batein Zikar Ka Qabil
Bhala Gardaantey Kab Thay
Ana K Thakht Par Baithey Hame Maloom He Kab Tha
Ana K Thakht Se Oper Bohat Bulandi Par
Kaheen Paryon K Jhurmat Mein Teri Payal Woh Paon Mein
Teri Zulfon K Saaey Mein Tere Chhotey Se Gaaon Mein
Sitarey, Chaand ,Sooraj Waalehana Raqs Karte Hein
Hamei'n Kab Ilm Tha Janaa
Tere Qadmon Ki Aahat Par , Gulabi Muskurahat Par
Tere Abroo Ki Janbish Par , Tere Sar K Isharay Par
Sadaey Dilbarana Par Nigha-E-Qatilana Par
Adaey Farizana Par, Jafaey Mujrimana Par
Chaman K Phool Saray Iss Tarha Dhiyaan Detay Hein
Zara Se Visal K Jhansay Mein Apni Jaan Detay Hein
Hamei'n Adraak He Kab Tha Janaa
Tere Paikar Mein Dhal Kar Chaandni Har Soo Bikharti Hai
Shab-E-Mehtaab Ki Darshandagi Kese Nikharti Hai
Hamei'n Kab Ilm Tha Janaa
Hamei'n Kaamil Bharosa Tha
Ke'h...
Hamare Sath Aisa Kabhi Nahi Hoga
Dil-E-Danaa Kabhi Qaboo Se Bahar Nahi Hoga
Yeh Dunya Dar  Dunya Daar Se Sadhu Nahi Hoga
Magar Phir Youn Hua Janaa Na Janay Kiun Hua Janaa
Barra Afsos Hua Janaa, Jigar Ka Khoon Hua Janaa
Teri Abru Ki Janbish K Qayal Ho Gaey Hum Bhi
Barray Be-Multafat Phirtey Thay Mayal Ho Gaey Hum Bhi
Sakhawat Karne Aaey Thay Aur Sayal Ho Gaey Hum Bhi
Barray Boorroh Ki Un Baton K Qayal Ho Gaey Hum Bhi
Ke'h...
Mohabbat Rog Hai Janaa
Ajab Sanjog Hai Janaa ....................


Please Do Click g+1 Button If You Liked The Post & Share It