Monday, 30 June 2014

Hamari Aankh Se Dil Tak Koi Gali Nikley

Dil Best Poetry

لبوں سے لفظ جھڑیں آنکھ سے نمی نکلے
کسی طرح تو میرے دل سے بے دلی نکلے

میں چاہتا ہوں پرندے رہا کیے جائیں
میں چاہتا ہوں تیرے ہونٹ سے ہنسی نکلے

میں چاہتا ہوں کوئی مجھ سے بات کرتا رہے
میں چاہتا ہوں کہ اندر کی خامشی نکلے

میں چاہتا ہوں مجھے طاقچے میں رکھا جائے
میں چاہتا ہوں جلوں اور روشنی نکلے

میں چاہتا ہوں تیرے ہجر میں عجیب ہو کچھ
میں چاہتا ہوں چراغوں سے تیرگی نکلے

میں چاہتا ہوں تجھے مجھ سے عشق ہو جائے
میں چاہتا ہوں کہ صحرا سے جل پری نکلے

میں چاہتا ہوں مجھے کوئی درد دان کرے
میں چاہتا ہوں کہ آنسو ہنسی خوشی نکلے

میں چاہتا ہوں کہ یہ راہ بحال ہو پھر سے
...ہماری آنکھ سے دل تک کوئی گلی نکلے


Labon Se Lafz Jharrein Aankh Se Nami Nikley
Kisi Tarha Tou Mere Dil Se Bay-Kali Nikley

Mein Chahta Hoon Parindey Rehaa Kiye Jaen
Mein Chahta Hoon Tere Hont Se Hansi Nikley

Mein Chahta Hoon Koi Mujh Se Baat Karta Rahey
Mein Chahta Hoon Ke'h Andar Ki Khamshi Nikley

Mein Chahta Hoon Mujhe Taaqchay Mein Rakha Jaey
Mein Chahta Hoon Jaloon Aur roshni Nikley

Mein Chahta Hoon Tere Hijr Mein Ajeeb Ho Kuch
Mein Chahta Hoon Charagon Se Teergi Nikley

Mein Chahta Hoon Tujhe Mujhse Ishq Ho Jaey
Mein Chahta Hoon Ke'h Sehra Se Jal-Pari Nikley

Mein Chahta Hoon  Mujhe Koi Dard Daan Karay
Mein Chahta Hoon Ke'h Aansoo Hansi Khushi Nikley

Mein Chahta Hoon Ke'h Yeh Raah Bahaal Ho Phir Se
Hamari Aankh Se Dil Tak Koi Gali Nikley ............

 Please Do Click g+1 Button If You Liked The Post  & Share It

Sunday, 29 June 2014

Mein Ne Sadyon Guzaarna Hai Tujhe

Best Love Poetry

میں نے صدیوں گزارنا ہے تجھے
تو میرا آخــــری زمــــانہ ہے

  Mein Ne Sadyon Guzaarna Hai Tujhe
Tu Mera Aakhrri Zamana Hai

 Please Do Click g+1 Button If You Liked The Post  & Share It

Saturday, 28 June 2014

Hum Ko Maloom Hai Anjaam Hamara Murshid

Murshid Urdu Poetry

ھم کو معلوم ھے انجام ھمارا مرشد
اس سمندر کا نہیں کوئی کنارا مرشد

ھم ہی اے عشق ترے پاؤں پڑے تھے آ کر
دوش اب اس میں نہیں کوئی تمہارا مرشد

اب تو جو کچھ ھے شبِ ہجر ترے ہاتھ میں ھے
خاک کر دے ! یا بنا دے مجھے تارا مرشد

میں اگر دشت نہیں دشت نما بن جاؤں
اس سے کم پر نہیں ہونا ھے گزارا مرشد

دشت کی خاک اڑانے پہ ہوا ہوں معمور
کوئی تنبیہ مجھے  کوئی اشارہ مرشد

حضرتِ میر میرے خواب میں آئے ہوئے تھے
آنکھ کھلتے ھی انہیں میں نے پکارا – مرشد

اک ترا ہجر ہو اور صاحبِ اولاد بھی ہو
کچھ تو ہو جائے بڑھاپے کا سہارا مرشد

یہی کافی ھے ترا ہجر نظر آتا ھے
اس کی تدفین نہیں ھم کو گوارا مرشد

آج سمجھا ہوں محبت کی کہانی اشفاق
 ... آج سمجھا کسے کہتا تھا خسارہ مرشد


Hum Ko Maloom Hai Anjaam Hamara Murshid
Iss Samandar Ka Nahi Koi Kinara'h Murshid

Hum He Ay Ishq Tere Paaon Parrey Thay Aakar
Dosh Ab Iss Mein Nahi Koi Tumhara Murshid

Ab Tou Jo Kuch Hai Shab-E-Hijr Tere Hath Mein Hai
Khaak Kar Day ! Ya Bana Day Mujhe Tara Murshid

Mein Agar Dasht Nahi Dasht Numa Ban Jaon
Iss Se Kam Par Nahi Hona Hai Guzara'h Murshid

Dasht Ki Khaak Urraney Pay Hua Youn Mamoor
Koi Tabeeh Mujhe , Koi Ishara'h Murshid

Hazrat-E-Meer Mere Khuwab Mein Aaey Huey Thay
Aankh Khulte He Uneh Mein Ne Pukara'h Murshid

Ik Tera Hijr Ho Aur Sahib-E-Olaad Bhi Ho
Kuch Tou Ho Jaey Burrhapay Ka Sahara Murshid

Yehi Kaafi Hai Tera Hijr Nazar Aata Hai
Is Ki Tadfeen Nahi Hum Ko Gawara'h Murshid

Aaj Samjha Hoon Mohabbat Ki Kahani Ashfaq
Aaj Samjha Kisay Kehta Tha Khasara'h Murshid ...

 Please Do Click g+1 Button If You Liked The Post  & Share It

Friday, 27 June 2014

Har Eennt Sochti Hai K Diwaar Mujh Se Hai

Diwaar Best poetry

ﺧﻮﺵ ﻓﮩﻤﯿﻮﮞ ﮐﮯ ﺳﻠﺴﻠﮯ ﺍﺗﻨﮯ ﺩﺭﺍﺯ ﮨﯿﮟ
ﮨﺮ ﺍﯾﻨﭧ ﺳﻮﭼﺘﯽ ﮨﮯ ﮐﮧ ﺩﯾﻮﺍﺭ ﻣﺠھ سے ہے

 Khush Fehmiyon K Silsilay Itney Daraaz Hein
Har Eennt Sochti Hai Ke'h Diwaar Mujh Se Hai

 Please Do Click g+1 Button If You Liked The Post  & Share It

Us Ne Bhi Hum Se Kaam Bohat Mukhtasir Liya

Bewafa Urdu Poetry

لینا نہیں تھا نام کسی کا، مگر لیا
دل نے یہ کام کتنی سہولت سے کر لیا

پتے گرے تو جسم چھپانے کے واسطے
پیڑوں نے اپنا آپ پرندوں سے بھر لیا

یکدم صداۓ گریہ و ماتم ہوئ بلند
چڑیوں نے جب درخت سے اذن_سفر لیا

میں نے کہا کہ رات کی رانی سے کر گریز
خوشبو نے میری بات کا الٹا اثر لیا

نظریں چرا کے بھاگ تو آتا وہاں سے میں
اشکوں نے میری آنکھ کو موقعے پہ دھر لیا

گر ھم نے زندگی سے رکھا ناروا سلوک
 ....اس نے بھی ہم سے کام بہت مختصر لیا

Lena Nahi Tha Naam Kisi Ka Magar Liya
Dil Ne Yeh Kaam Kitni Sahoolat Se Kar Liya

Pattay Giray Tou Jism Chhupaney K Waastey
Pairron Ne Apna Aap Parindon Se Bhar Liya

Yukdum Sada-E-Girya-O-Matam Hui Buland
Chirryon Ne Jab Darkht Se Izn-E-Safar Liya

Mein Ne Kaha K Raat Ki Rani Se Kar Guraiz
Khushboo Ne Meri Baat Ka Ulta Asar Liya

Nazrein Chura K Bhaag Tou Aata Wahan Se Mein
Ashkon Ne Meri Aankh Ko Moqay Pay Dhar Liya

Gar Hum Ne Zindagi Se Rakha Naarwa Sulook
Iss Ne Bhi Hum Se Kaam Bohat Mukhtasir Liya....


 Please Do Click g+1 Button If You Liked The Post  & Share It

Thursday, 26 June 2014

Mein Ne Such Much Bhula Diya Hai Tumeh

Bhool Urdu Poetry

تم کو شاید نہ اعتبار آۓ
میں نے سچ مچ , بھلا دیا ھے تمھیں

Tum Ko Shayad Na Aitbaar Aaey
Mein Ne Such Much Bhula Diya Hai Tumeh

 Please Do Click g+1 Button If You Liked The Post  & Share It

Wednesday, 25 June 2014

Youn Chaak Kiya Hum Ne Geraibaan Wagaira

Ap K Honton

ہے آپ کے ہونٹوں پہ جو مسکان وغيرہ
قربان گئے اس پہ دل و جان وغيرہ

بلي تو يونہي مفت ميں بدنام ہوئي ہے
تھيلے ميں تو کچھ اور تھا سامان وغيرہ

بے حرص و غرض فرض ادا کيجيے اپنا
جس طرح پوليس کرتي ہے چالان وغيرہ

اب ہوش نہيں کوئي کہ بادام کہاں ہے
اب اپني ہتھيلي پہ ہيں دندان وغيرہ

کس ناز سے وہ نظم کو کہہ ديتے ہيں نثري
جب اس کے خطا ہوتے ہيں اوزان وغيرہ

جمہوريت اک طرز حکومت ہے کہ جس ميں
گھوڑوں کي طرح بکتے ہيں انسان وغيرہ

ہر شرٹ کي بشرٹ بنا ڈالي ہے انورؔ
 ... يوں چاک کيا ہم نے گريبان وغيرہ


Hai Ap K Honton Pay Jo Muskaan Wagaira
Qurban Gaey Us Pay Dil-O-Jaan Wagaira

Billi Tou Youn He Muft Mein Badnaam Hui Hai
Thailey Mein Tou Kuch Aur Tha Samaan Wagaira

Be-Hars-O-Garz Farz Adaa Kijiye Apna
Jis Tarha Police Karti Hai Chalaan Wagaira

Ab Hosh Nahi Koi K Badaam Kahan Hai
Ab Apni Hatheli Pay Hai Dandaan Wagaira

Kis Naaz Se Woh Nazam Ko Keh Daitey Hein Nasri
Jab Us K Khata Hotey Hai Owsaan Wagaira

Jamhoriyat Ik Tarz-E-Hukoomat Hai K Jis Mein
Ghorron Ki Tarha Biktey Hein Insaan Wagaira

Har Shirt Ki Ba-Shirt Bana Daali Hai Anwar
Youn Chaak Kiya Hum Ne Geraibaan Wagaira ...

 Please Do Click g+1 Button If You Liked The Post  & Share It

Tuesday, 24 June 2014

Tu He Tou Ik Ghoont Bacha Hai

Romantic Love Poetry

میرے جیون کے پیالے میں
تُو ہی تو اک گھونٹ بچا ہے

 Merey Jeevan K Piyalay Mein
Tu He Tou Ik Ghoont Bacha Hai

 Please Do Click g+1 Button If You Liked The Post  & Share It

Monday, 23 June 2014

Chalta Hoon Sar Utha K Mein Kitney Waqar Se


Sad Urdu Ghazlein

عزت ملی وہ پیرہن  تار تار سے
چلتا ہوں سر اُٹھا کے میں کتنے وقار سے

ممکن ہے یہ سیارہ مُجھے چھوڑنا پڑے
تنگ آ گیا ہوں  گردش  لیل و نہار سے

اب بھی ترے وصال کے موسم کا ایک پل
باہر کھڑا ہوا ہے غموں  کی قطار سے

شاید یہ آفتاب بدلنا  پڑے  مُجھے
یہ آئنہ بھی اٹ گیا گرد و غبار سے

رکھا ہوا تھا آنکھ میں صحرا سمیٹ کر
تر  ہو گیا  ہے درد کی اک آبشار سے

ہے میری پُختگی پہ الگ کوزہ گر کو ناز
ہے خاک سُرخرو مرے نقش و نگار سے

اک موج ـ تُند و تیز کے ہاتھوں میں آ گیا
میں ہمکنار ہوتا ہوا بے کنار سے

ارشاد اس برس بھی اُسے تشنگی ملی
..جس شاخ  گُل کو آس تھی ابر بہار سے


Izzat Mili Woh Pairhan-E-Taar Taar Se
Chalta Hoon Sar Utha K Mein Kitne Waqar Se

Mumkin Hai Yeh Sayyara'h Mujhe Chorrna Parrey
Tang Agaya Hoon Gardish-E-Lail-O-Nehaar Se

Ab Bhi Terey Visaal K Mosam Ka Aik Pal
Bahar Kharra Hua Hai Ghamon Ki Qataar Se

Shayad Yeh Aftaab Badalna Parrey Mujhe
Yeh Aaiena Bhi Utt Gaya Gard-O-Gubaar Se

Rakha Hua Tha Aankh Mein Sehra Samait Kar
Tar Ho Gaya Hai Dard Ki Ik Aabshaar Se

Hai Meri Pukhtagi Pay Alag Koozah Gar Ko Naaz
Hai Khaak Surkhroo Merey Naqsh-O-Nigaar Se

Ik Mouj-E-Tand-O-Taiz K Hathon Mein Aagaya
Mein Hum Kinaar Hota Hua Be-Kinaar Se

Irshaad Is Baras Bhi Usay Tishnagi Mili
Jis Shakh-E-Gul Ko Aas Thi Abr-E-Bahaar Se..

 Please Do Click g+1 Button If You Liked The Post  & Share It

Sunday, 22 June 2014

Apni Fitrat Mein Woh Pathar Tha So Pathar Nikla



ھم نے ہیرے کی طر ح اسکو تراشا تھا بہت‎
اپنی فطرت میں وہ پتھر تھا سو پتھر نکلا

Hum Ne Heeray Ki Tarha Usko Tarasha Tha Bohat
Apni Fitrat Mein Woh Pathar Tha So Pathar Nikla


 Please Do Click g+1 Button If You Liked The Post  & Share It

Saturday, 21 June 2014

Tum Kaho Shaam Tou Phir Shaam Utar Aati Hai


Best Urdu Poetry

تم کہو شام تو پھر شام اُتر آتی ہے
دل پہ شب صورت انعام اُتر آتی ہے

دن گزرتا ہے خد و خال کے ایوانوں میں
رات پھولوں میں جوں گُلفام اُتر آتی ہے

شام پڑتے ہی کھنکتے ہیں اچانک گھنگرو
رات پازیب میں بسرام اُتر آتی ہے

رات زُلفوں کی طرح چھاتی ہے کالی کالی
دل میں لے کے وہ ترا نام اُتر آتی ہے

کچھ تصور میں نہِیں آتا محض تیرے سوا
رات لے کے ترا پیغام اُتر آتی ہے

صبح تک رہتا ہے پھر رقص محبت جاری
 .........عشق کی شکل بہ الہام اُتر آتی ہے


Tum Kaho Shaam Tou Phir Shaam Utar Aati Hai
Dil Pay Shab Soorat-E-Inaam Utar Aati Hai

Din Guzarta Hai Khad-O-Khaal K Aiwaano Mein
Raat Phoolon Mein Joon Gulfaam  Utar Aati Hai

Shaam Parrtey He Khanaktey Hein Achanak Ghungri
Raat Paazaib Mein Basraam Utar Aati Hai

Raat Zulfon Ki Tarha Chhaati Hai Kaali Kaali
Dil Mein Lay K Woh Tera Naam Utar Aati Hai

Kuch Tasawur Mein Nahi Aata Mehaz Tere Siwa
Raat Lay K Tera Paighaam  Utar Aati Hai

Subhu Tak Rehta Hai Phir Raqs-E-Mohabbat Jaari
Ishq Ki Shakal Ba ILhaam Utar Aati Hai .................

 Please Do Click g+1 Button If You Liked The Post  & Share It

Friday, 20 June 2014

Mohabbat Buri Hai Buri Hai Mohabbat

Best Mohabbat Poetry

مُحبّت بُری ہـے بُری ہـے مُحبّت
کہـے جا رہـے ہیں کِیـے جا رہـے ہیں



Mohabbat Buri Hai , Buri Hai Mohabbat
Kahay Jaa Rahey Hein , Kiye Jaa Rahey Hein


 Please Do Click g+1 Button If You Liked The Post  & Share It

Thursday, 19 June 2014

Ay Dost Teri Aankh Jo Num Hai Tou Mujhe Kia

Ansoo Poetry Collection



اے دوست  تری آنکھ جو نم ہے تو مجھے کیا
میں خوب ہنسوں گا، تجھے غم ہے تو مجھے کیا

کیا میں نے کہا تھا کہ زمانے سے بھلاکر
اب تو بھی سزاوارِ ستم ہے تو مجھے کیا

ہاں لے لے قسم گر مجھے قطرہ بھی ملا ہو
تو شاکی اربابِ کرم ہے تو مجھے کیا

جس در سے ندامت کے سوا کچھ نہیں ملتا
اُس در پہ ترا سر بھی جو خم ہے تو مجھے کیا

میں نے تو پکارا ہے محبت کے اُفق سے
رستے میں ترے سنگِ حرم ہے تو مجھے کیا

بھولا تو نہ ہوگا تجھے سقراط کا انجام
ہاتھوں میں ترے ساغرِ سم ہےتو مجھے کیا

پتھر نہ پڑیں گر سرِبازار تو کہنا
تو معترف حسنِ صنم ہے تو مجھے کیا

میں سرمد و منصور بنا ہوں تری خاطر
یہ بھی تری اُمید سے کم ہے تو مجھے کیا ...



Ay Dost Teri Aankh Jo Num Hai Tou Mujhe Kia
Mein Khoob Hansoo'n Ga Tujhe Ghamhai Tou Mujhe Kia

Kia Mein Ne Kaha Tha K Zamaney Se Bhala Kar
Ab Tu Bhi Saza War-E-Sitam Hai Tou Mujhe Kia

Han Lay Lay Qasam Gar Mujhe Qatra Bhi Mila Ho
Tu Saaki Arbab-E-Karam Hai Tou Mujhe Kia

Jis Dar Se Nidamat K Siwa Kuch Nahi Milta
Us Dar Pe Tera Sar Bhi Kham Hai Tou Mujhe Kia

Mein Ne Tou Pukara Hai Mohabbat K Ufaq Se
Rastey Mein Tere Sang-E-Haram Hai Tou Mujhe Kia

Bhoola Tou Na Hoga Tujhe Saqraat Ka Anjaam
Hathon Mein Terey Sagar-E-Sum Hai Tou Mujhe Kia

Pathar Na Parein Gar Sar-E-Bazaar Tou Kehna
Tu Moutaraf Husn-E-Sanam Hai Tou Mujhe Kia

Mein Sarmad-O-Mansoor Bana Hoon Teri Khaatir
Yeh Bhi Teri Ummeed Se Kam Hai Tou Mujhe Kia ...


 Please Do Click g+1 Button If You Liked The Post  & Share It

Wednesday, 18 June 2014

Duaa Maangi Hai Taaq Raaton Mein

Duaa Urdu Poetry

میں اُس کے ساتھ جُفت ہو جاؤں
دُعـــــا مانگی ہے، طاق راتوں میں


 Mein Us K Saath Juft Ho Jaaon
 Duaa Maangi Hai Taaq Raaton Mein

 Please Do Click g+1 Button If You Liked The Post  & Share It

Tuesday, 17 June 2014

Tujhe Kho Kar Mohabbat Ko Ziyada Kar Liya Mein Ne

Mohabbat Urdu Poetry

تجھے کھو کر محبت کو زیادہ کر لیا میں نے
یہ کس حیرت میں آئینہ کشادہ کر لیا میں نے

مجھے پیچیدہ جذبوں کی کہانی نظم کرنی تھی
سو جتنا ہو سکا اسلوب سادہ کر لیا میں نے

محبت کا سنا تھا ، ذات کی تکمیل کرتی ہے
مگر اس آرزو میں خود کو آدھا کر لیا میں نے

شکستِ خواب پر ہی خواب کی بنیاد رکھنا تھی
در ِ امکان پھر سے ایستادہ کر لیا میں نے

نئی رت میں محبت کا اعادہ چاہتا تھا وہ
پرانے تجربے سے استفادہ کر لیا میں نے

سر ِ ساحل مجھے پیچھے سے اب آواز مت دینا
یہاں سے پار جانے کا ارادہ کر لیا میں نے

نہ راس آئی مجھے جب یہ تری دنیائے ہاؤ ہو
 ... ہوائے بے دلی ہی کو لبادہ کر لیا میں نے


Tujhe Kho Kar Mohabbat Ko Ziyada Kar Liya Mein Ne
Yeh Kis Hairat Mein Aaiena Kushada'h Kar Liya Mein Ne

Mujhe Paicheeda'h Jazbon Ki Kahani Nasb Karni Thi
So Jitna Ho Saka  Asloob Sada'h Kar Liya Mein Ne

Mohabbat Ka Suna Tha , Zaat Ki Takmeel Karti Hai
Magar Is Aarzoo Mein Khud Ko Aadha'h Kar Liya Mein Ne

Shikasht-E-Khuwab Par He Khuwab Ki Bunyad Rakhna Thi
Dar-E-Imkaan Phir Se Eisteaad'ah Kar Liya Mein Ne

Nai Rut Mein Mohabbat Ka A'aada'h Chahta Tha Woh
Purane Tajrubay Se Istafada'h Kar Liya Mein Ne

Sar-E-Sahil Mujhe Peechay Se Ab Aawaz Mat Dena
Yahan Se Paar Janey Ka Irada'h Kar Liya Mein Ne

Na Raas Mujhe Jab Yeh Teri Dunya-E-How Hoo
Hawa-E-Be-Dili Ko He Libada'h Kar Liya Mein Ne ....

Please Do Click g+1 Button If You Liked The Post  & Share It

Paaon Pathar Pe Bhi Parr Jayain Tou Dhool Urrti Hai

Ishq K Qalandar

تونے دیکھی ہی نہیں عشق کے قلندر کی دھمال
پاؤں پتھر پہ بھی   پڑ جائیں تو دھول اڑتی  ہے

Tu Ne Dekhi He Nahi Ishq K Qalandar Ki Dhamaal
 Paaon Pathar Pe Bhi Parr Jayain Tou Dhool Urrti Hai


Please Do Click g+1 Button If You Liked The Post  & Share It