Saturday, 30 November 2013

Chhorr Kar Ay Zindagi Tujhko Agar Jata Hoon Mein...

chorr Kar Ay Zindagi


کیوں بلندی پا کے ہستی میں اتر جاتا ہوں میں
کس لیے احساس کی حد سے گزر جاتا ہوں میں

ڈوب جائے گی تو اپنے آنسوئوں میں سوچ لے
چھوڑ کے اے زندگی تجھ کو اگر جاتا ہوں میں

زخم بے انداز ہیں پھر بھی ٹھہرِ شہرِ طلب
آنے والی کل کی خاطر پھر سنور جاتا ہوں میں

کھنچتا ہوں سانس میں سنسان راتوں میں خلش
اور دن کے درد میں ہر سو بکھر جاتا ہوں میں

چیختے لمحوں کے آنسو اپنے دامن میں لیے
مجھ پہ یہ الزام ہے کہ اپنے گھر جاتا ہوں میں

کون جانے کون سی منزل بنے منزل مری
آتا ہوں جانے کدھر سے اور کدھر جاتا ہوں میں

بھید لے کے رات کی تاریکیوں کے اے قمر
...چپکے چپکے دن کی بستی سے گزر جاتا ہوں میں


Kiun Bulandi Paa K Hasti Mein Utar Jata Hoon
Kis Liye Ehsaas Ki Had Se Guzar Jata Hoon Mein

Doob Jaegi Tu Apne Aansoun Mein Soch Lay
Chhorr Kar Ay Zindagi Tujhko Agar Jata Hoon Mein

Zakhm Be-Andaz Hein Phir Bhi Thehar Shehr-e-Talab
Aanay Wali Kal Ki Khatir Phir Sanwar Jata Hoon Mein

Kheenchta Hoon Sans Mein Sunsaan Raton Mein Khalish
Aur Din K Dard Mein Har Su Bikhar Jata Hoon Mein

Cheenkhtay Lamho'n K Aansu Apne Daman Mein Liye
Mujh Pe Yeh Ilzam Hai Keh Apne Ghar Jata Hoon Mein

Kon Janay Konsi Manzil Banay  Manzil Meri
Aata Hoon Janay Kidhar Se Aur Kidhar Jata Hoon Mein

Bhaid Lay K Raat Ki Tareekiyon Ka Ay Qamar
Chupkey Chupkey Din Ki Basti Se Guzar Jata Hoon Mein... 


Please Do Click +1 Button If You Liked The Post  Then Share It

Friday, 29 November 2013

Badan Ko Hum Ne Pehan Kar Purana Kar Diya Hai... ....


Isi Quba Mein


اسی قبا میں بسر اک زمانہ کر دیا کر دیا ہے
بدن کو ہم نے پہن کر پرانا کر دیا ہے

یہ دشت دل ہے یہاں کوئی بھی نہیں آتا
سو ہم نے دفن یہیں سب خزانہ کر دیا ہے

افق کے پار یہ سورج سے جاملے شاید
چراغ آب رواں پر روانہ کر دیا ہے

جو ایک عمر سے اک دوسرے کی زد پر تھے
انہیں مفاد نے شانہ بشانہ کر دیا ہے

جہاں رزق کے ان پست قامتوں نے میاں
مزاج عشق کو بھی عامیانہ کر دیا ہے

شکار اور شکاری بدل گئے ہیں سعود
….. سبگتگن کو ہرن نے نشانہ کر دیا ہے




Isi Quba Mein Basar Ik Zamana Kar Diya Hai
Badan Ko Hum Ne Pehan Kar Purana Kar Diya Hai

Yeh Dasht-e-Dil Hai Yahan Koi Bhi Nahi Aata
So Hum Ne Dafan Yaheen Sab Khazana Kar Diya Hai

Ufaq K Paar Yeh Sooraj Se Jaa Milay Shayad
Charaag Aab-e-Rawaa’n Pay Rawana Kar Diya Hai

Jo AiIk Umar Se Ik Doosray Ki Zad Par Thay
In He Mufaad Ne Shana Bashana Kar Diya Hai

Jahan Rizq K In Pust Qaamto’n Ne Miyaa’n
Mijaz-e-Ishq Ko Bhi Aamiyana Kar Diya Hai

Shikaar Aur Shikari Badal Gaey Hein Saood
Subagtageen Ko Hiran Ne Nishana Kar Diya Hai.....

Please Do Click +1 Button If You Liked The Post  Then Share It

Murjha Rahey Hein Phool Baharo'n K Saey Mein ... ....

Baharon K Saaey

سـرو سمـن کی شـوخ قـطاروں کے سائے میں
مُرجھا رہے ہیں پھول بہارو ں کے سائے میں

چھـوٹی سـی اک خـلوص کی دنـیا بـسائیں گے
آبـادیـوں سـے دور چـناروں کـے ســائـے مـیں

تــاریـکـیـوں مـیـں اور سـیـاہـی نــہ گھـولــئے
زلـفـیں بـکھـیریے نـہ سـتاروں کے سائے میں

جـانـے بـھنور سـے کھیـلنے والـے کـہاں گئے
کـشتی تـو آ گـئی ہے کـناروں کـے سـائے میں

مـانـوس ہـو گـئی ہـے خـزاں سـے مـری بـہـار
اب لُـطـف کـیا مـلے گـا بہاروں کے سائے میں

بُـلـبـل کــی زنـدگـی تــو بـہـر حـال کـٹ گــئی
پھولوں کی گودمیں کبھی خاروں کے سائے میں

انـگـڑائـی لـی جـنوں نـے ، خرد سو گئی شکیب
……نـغـمـات کـی لـطـیف پھـواروں کـے سائـے مـیں



Sar-o-Saman Ki Shokh Qataro'n K Saaey Mein
Murjha Rahey Hein Phool Baharo'n K Saey Mein

Chhoti Si Ik Khuloos Ki Dunya Basaein Gay Hum
Aabadiyo'n Se Door Chanaro'n K Saaey Mein

Tareekiyo'n Mein Aur Siyahee Na Gholye
Zulfein Bakhairye Na Sitaaro'n K Saaey Mein

Janay Bhanwar Se Khailney Walay Kahan Gaey
Kashti Tou Aagaiee Hai Kinaro'n K Saaey Mein

Manoos Hogaiee Hai Khizaa'n Se Meri Bahaar
Ab Lutf Kia Milay Ga Baharo'n K Saaey Mein

Bulbul Ki Zindagi Tou Baher-Hal Kat Gaiee
Phoolo'n Ki Goud Mein Kabhi Khaaro'n K Saaey Mein

Angrraiee Li Junoo Ne , Khurd So Gaiee Shakeeb
Nagmaat Ki Lateef Phuwaro'n K Saaey Mein……….


Please Do Click +1 Button If You Liked The Post  Then Share It

Thursday, 28 November 2013

Udaasiyo’n Ka Yeh Mosam Badal Bhi Sakta Tha....

Meray Sath Chal

    اداسیوں کا یہ موسم بدل بھی سکتا تھا
    وہ چاہتا تو میرے ساتھ چل بھی سکتا تھا

    وہ شخص جسے چھوڑنے میں تونے جلدی کی
    تیرے مزاج کے سانچے میں ڈھل بھی سکتا تھا

  وہ جلد باز خفا ہوکہ چل دیا ورنہ
  تنازعات  کا کوئی حل نکل بھی سکتا تھا

    انا نے ہاتھ اٹھانے ہی نہیں دیے ورنہ
    میری دعا سے وہ پتھر پگھل بھی سکتا تھا

    تمام عمر تیرا منتظر رہا محسن
   ... ...یہ اور بات وہ رستہ بدل بھی سکتا تھا



Udaasiyo’n Ka Yeh Mosam Badal Bhi Sakta Tha
Woh Chahta Tou Meray Sath Chal Bhi Sakta Tha

Woh Shakhs  Jisay Chorrnay Mein Tu Ne Jaldi Ki
Teray Mizaaj K Saanchay Main Dhal Bhi Sakta Tha

Woh Jaldbaz Khafa Ho Keh Chal Diya Warna
Tanaze’aat Ka Koi Hal Nikal Bhi Sakta Tha

Ana Ne Hath Uthanay He Nahi Diye Warna
Meri Dua Say Woh Pathar Pighal Bhi Saktha Tha

Tamaam Umer Tera Muntazir Raha Mohsin
Ye Aur Baat Woh Rasta Badal Bhi Sakta Tha…


Please Do Click +1 Button If You Liked The Post  Then Share It

Har Roz Imtehaa’n Se Guzara Tou Mein Gaya... ...


Tou Mein Gaya


ہر روز امتحاں سے گزارا تو میں گیا
تیرا تو کچھ گیا نہیں مارا تو میں گیا

جب تک میں تیرے پاس تھا بس تیرے پاس تھا
تو نے مجھے زمیں پہ اتارا تو میں گیا

شل انگلیوں سے تھام رکھا ہے چٹان کو
چھوٹا جو ہاتھ سے یہ کنارا تو میں گیا

اپنی انا کی آہنی زنجیر توڑ کر
دشمن نے بھی مدد کو پکارا تو میں گیا

یہ طاق یہ چراغ میرے کام کے نہیں
آیا نہیں نظر وہ دوبارہ تو میں گیا

تیری شکست اصل میں میری شکست ہے
... ..تو مجھ سے ایک بار بھی ہارا تو میں گیا



Har Roz Imtehaa’n Se Guzara Tou Mein Gaya
Tera Tou Kuch Gaya Nahi Mara Tou Mein Gaya

Jab Tak Mein Teray Pass Tha Bus Teray Pass Tha
Tu Ne Mujhe Zamee’n Pay Utara Tou Mein Gaya

Shal Ungliyo’n Se Thaam Rakha Hai Chataan Ko
Chhoota Jo Hath Se Yeh Kinara Tou Mein Gaya

Apni Anaa Ki Aahani Zanjeer Torr Kar
Dushman Ne Bhi Madad Ko Pukara Tou Mein Gaya

Yeh Taaq Yeh Charaag Meray Kaam K Nahi
Aaya Nazar Nahi Woh Dobara Tou Mein Gaya

Teri Shikasht Asal Mein Meri Shikasht Hai
Tu Mujhse Aik Baar Bhi Hara Tou Mein Gaya... ..


Please Do Click +1 Button If You Liked The Post  Then Share It

Tuesday, 26 November 2013

Halaat K Pinjro’n Mein Giraftaar Musalsal... ...

Baizaar Musalsal


    حالات کے پنجروں میں گرفتار مسلسل
    جی اپنا رہا خود سے بھی بیزار مسلسل

   اس شہر میں جب جب بھی کوئی جرم ہوا ہے
    ہم لوگ ہی ٹھرے ہیں سزاوار مسلسل

اظہار میں ہم نے تو کوئی فرق نہ چھوڑا
اس طرف سے ہوتا رہا انکار مسلسل

   اے عمر بتا پھر بھی تجھے کیسے گزاریں
    .. ...خدشات سے رہتے ہوے دوچار مسلسل

Halaat K Pinjro’n Mein Giraftaar Musalsal
Jee Apna Raha Khud Se Bhi Baizaar Musalsal

Is Sheher Mein Jab Jab Bhi Koi Jurm Hua Hai
Hum Log He Thehray Hein Sazawaar Musalsal

Izhar Mein Hum Ne Tou Koi Farq Na Chhorra
Us Taraf Say Hota Raha Inkaar Musalsal

Ay Umar Bata Phir Bhi Tujhe Kaise Guzarein
Khadshaat Say Rehtay Huey DoChaar Musalsal... ..

Please Do Click +1 Button If You Liked The Post  Then Share It

Saari Umar Kon Karta Hai Chaahat Mere Huzoor.....

Zulaikha Mijaz Log

ساری عمر کون کرتا ہے چاہت میرے حضور
..ملتے ہیں کب جہاں میں زلیخا مزاج لوگ 

Saari Umar Kon Karta Hai Chaahat Mere Huzoor
 Miltey Hein Kab Jahaan Mein Zulaikha Mizaaj Log..


Please Do Click +1 Button If You Liked The Post  Then Share It

Sunday, 24 November 2013

Woh Shakhs Jo Andar Se Bhi Bahir Ki Tarha Ho ... ...

Bahar Ki Tarha


دو چار نہیں، مجھ کو فقط ایک ہی دِکھا دو
..وہ شخص جو اندر سے بھی باہر کی طرح ہو   


Do Chaar Nahin Mujh Ko Faqat Aik He Dikha Do
 Woh Shakhs Jo Andar Se Bhi Bahir Ki Tarha Ho..

Please Do Click +1 Button If You Liked The Post  Then Share It

Jaan-e-Azeez Yeh Teray Janay K Din Na Thay ... ...

janey K Din

مٹی میں اپنا آپ، ملانے کے دن نہ تھے
جان عزیز، یہ تیرے، جانے کے دن نہ تھے



اب تو بہار آئی تھی، اب تو کھلے تھے پھول
یہ اہل گلستاں کو، رلانے کے دن نہ تھے

مانا کہ تجھ کو رسم مدارات تھی عزیز
لیکن ابھی قضا کو، بلانے کے دن نہ تھے

گہری ھے شام، چاند کا امکان بھی نہیں
یہ تو تیرے چراغ، بجھانے کے دن نہ تھے



باقی تھی رات اور ابھی، احباب بیٹھے تھے
یوں جا کے بزم غیر، سجانے کے دن نہ تھے



شہزادیوں کی طرح رکھا تھا جسے کبھی
....جنگل میں اسکو چھوڑ کے، جانے کے دن نہ تھے


Mitti Mein Apna Aap Milaney K Din Na Thay
Jaan-e-Azeez , Yeh Teray, Janey K Din Na Thay

Ab Tou Bahaar Aaiee Thi, Ab Tou Khilay Thay Phool
Yeh Ehl-e-Gulistaa'n Ko Rulaney K Din Na Thay

Mana K Tujh Ko Rasm-e-Madarat Thi Azeez
Lekin Abhi Qaza Ko, Bulaney K Din Na Thay

Gehri Hai Shaam , Chaand Ka Imkaan Bhi Nahi
Yeh Tou Teray Charaag, Bujhaney K Din Na Thay

Baqi Thi Raat Aur Abhi, Ehbaab Baithay Thay
Yun Ja K Bazm-e-Gair Sajanaey K Din Na Thay

Shehzadiyo'n Ki Tarha Rakha Tha Jisay Kabhi
Jungle Mein Usko Chorr K ,Janey K Din Na Thay.. ..

Please Do Click +1 Button If You Liked The Post  Then Share It

Saturday, 23 November 2013

Mera He Dil Hai Woh Jahan Tu Sama Sakay ... ...

Tu Sama Sakay

ارض و سما کہاں تری وسعت کو پا سکے
میرا ہی دل ہے وہ کہ جہاں تو سما سکے
وحدت میں تیری حرف دوئی کا نہ آ سکے
آئینہ کیا مجال تجھے منہ دکھا سکے
میں وہ فتادہ ہوں کہ بغیر از فنا مجھے
نقشِ قدم کی طرح نہ کوئی اٹھا سکے
قاصد نہیں یہ کام ترا اپنی راہ لے
اس کا پیام دل کے سوا کون لا سکے
غافل خدا کی یاد پہ مت بھول زین ہار
اپنے تئیں بھلا دے اگر تو بھلا سکے
یا رب یہ کیا طلسم ہے ادراک و فہم یاں
دوڑے ہزار آپ سے باہر نہ جا سکے
گو بحث کر کے بات بٹھائی پہ کیا حصول
دل سے اٹھا خلاف اگر تو اٹھا سکے
اخفائے رازِ عشق نہ ہو آبِ اشک سے
یہ آگ وہ نہیں جسے پانی بجھا سکے
مستِ شرابِ عشق وہ بے خود ہے جس کو حشر
... ...اے درد چاہے لائے بخود پھر نہ لا سکے


Arz-O-Sama Kahan Teri Wus'at Ko
Mera He Dil Hai Woh Jahan Tu Sama Sakay

Wehdat Mein Teri Harf-e-Doiee Ka Na Aa Sakay
Aaina Kia Majaal Tujhe Mounh Dikha Sakay

Mein Woh Fatada'h Hoon Keh Bagair Az Fana Mujhe
Naqsh-E-Qadam Ki Tarha Na Koi Utha Sakay

Qasid Nahi Yeh Kaam Tera Apni Raah Lay
Us Ka Payaam Dil K Siwa Kon Laa Sakay

Gaafil Khuda Ki Yaad Pay Mat Bhool Zain-Haar
Apne Teeyein Bhula Day Agar Tu Bhula Sakay

Ya-Rab Yeh Kia Tilissam Hai Adrak-O-Feham Yaa'n
Dorray Hazaar Apse Bahar Na Ja Sakay

Go Behas Kar K Baat Bithaee Pay Kia Husool
Dil Se Utha Khilaaf Agar Tu Utha Sakay

Akhafaey Raaz-E-Ishq Na Ho Aab-E-Ashk Se
Yeh Aag Woh Nahi Jisay Pani Bhula Sakay

Mast-E-Sharab-E-Ishq Woh Be-Khud Hai Jisko Hashar
At Dard Chahey Laey Ba-Khud Phir Na La Sakay...

Please Do Click +1 Button If You Liked The Post  Then Share It


Jan Lay Lay Ga Koi Jaan Se Piyara Ban Kar ….

Jan Se Piyara

تم محبت کی روایات سے نہ بچ پاؤ  گے
جان لے لے گا کئی جان سے پیارا بن کر۔۔۔

Tum Mohabbat Ki Rivayaat Se Na Bach Paogay
Jan Lay Lay Ga Koi Jaan Se Piyara Ban Kar ….

Please Do Click +1 Button If You Liked The Post  Then Share It