Thursday, 29 August 2013

Naiee Tarha Se Nibhane Ki Dil Ne Thaani Hai .. ..

Mohabbat Bohat Purani

نئی طرح سے نبھانے کی دل نے ٹھانی ہے
وگرنہ  اس سے محبت بہت  پُرانی  ہے

خدا وہ دن نہ دکھائے کہ میں کسی سے سنوں
کہ تو نے بھی غمِ دنیا  سے  ہار مانی  ہے

زمیں پہ رہ کے ستارے شکار کرتے ہیں
مزاج اہلِ محبت  کا  آسمانی  ہے 

ہمیں عزیز ہو کیونکر نہ شامِ غم کہ یہی
بچھڑنے والے، تیری آخری نشانی ہے

اتر پڑے ہو تو دریا سے پوچھنا کیسا؟
کہ ساحلوں سے ادھر کتنا تیز پانی ہے

بہت دنوں میں تیری یاد اوڑھ کر اتری
یہ شام کتنی سنہری ہے کیا سہانی ہے

میں کتنی دیر اسے سوچتا رہوں محسن
 .. .. کہ جیسے اس کا بدن بھی کوئی کہانی ہے


Naiee Tarha Say Nibhane Ki Dil Ne Thaani Hay
Wa-garna Us Se Mohabbat Bohat Puraani Hay

“KHUDA” Woh Din Na Dikhaaye K Main Kisi Se Sunoo
K Tu Ne Bhi Gham-e-Duniya Se Haar Maani Hay

Zameen Pay Reh K Sitaare Shikaar Kerte Hein
Mizaaj Ehl-e-Mohabbat Ka Aasmaani Hay

Hame Azeez Ho Q Kar Na Sham-e-Gham K Yehi
Bicharne Waaley , Teri Aakhri Nishaani Hay

Utarr Parey Ho Tou Darya Se Poochna Kaisa
Ke Saahilon Se Udhar Kitna Taiz Paani Hay

Bohot Dinon Main Teri Yaad Orh Kar Utri
Ye Sham Kitni Sunehri Hay Kia Suhaani Hay

Main Kitni Dair Usay Sochta Rahoon Mohsin
K  Jaise Us Ka Badan Bhi Koi Kahani Hay…




Please Do Click g+1 Button If You Liked The Post  & Share It

Tu Nahi Hota Tou Har Shay Mein Kami Rehti Hai .. ..

 Kami Rehti Hai

دوست بھی ملتے ہیں محفل بھی جمی رہتی ہے
تو نہیں ہوتا تو ہر شے میں کمی رہتی ہے

اب کے جانے کا نہیں موسم گر یہ شائد
مسکرائیں بھی تو آنکھوں میں نمی رہتی ہے

عشق عمروں کی مسافت ہے کسے کیا معلوم؟
کب تلک ہم سفری ہم قدمی رہتی ہے

کچھ جزیروں میں کبھی کھلتے نہیں چاہت کے گلاب
 .. .. کچھ جزیروں پہ سدا دھند جمی رہتی ہے


Dost Bhi Miltay Hein Mehfil Bhi Jami Rehti Hai
Tu Nahi Hota Tou Har Shay Mein Kami Rehti Hai

Ab K Janay Ka Nahi Mosam Gar-Yah Shayad
Mukuraen Bhi Tou Aankhon Mein Nami Rehti Hai

Ishq Umron Ki Musafat Hai Kisay Kia Maloom
Kab Talak Hum  Safari Hum Qadami Rehti Hai

Kuch Jazeeron Mein Kabhi Khiltay Nahi Chaahat K Gulaab
Kuch Jazeeron Pay Sada Dhund Jami Rehti Hai .. ..



Please Do Click g+1 Button If You Liked The Post  & Share It 

Tuesday, 27 August 2013

Jab Guzar Gaah-e-Mohabbat Na Kushadah Hogi .. ..

Dil K Jazbon

جب  گزرگاہ محبت  نہ کشادہ ہو گی
جستجو منزل  جاناں کی زیادہ ہو گی

دل کے جذبوں پہ اندھیرے ہی مسلط ہوں گے
چاندنی جب نہ سر ِ بام ِ ارادہ ہو گی

رونق ِ محفل  بادہ ہے ہمارے دم سے
ہم نہ ہوں گے تو کہاں محفل ِ بادہ ہو گی

جب تلک ڈھانپ نہ لے چادر ِ افلاک مجھے
بے لباسی  مرے  پیکر  کا لبادہ  ہو گی 

اب اگر لوٹ کے آئیں گے بچھڑنے والے
کوئی آغوش  محبت  نہ کشادہ ہو گی

میری معصوم نظر ڈھونڈ رہی ہے اُس کو
 .. ..کوئی لڑکی تو بھرے شہر میں سادہ ہو گی



Jab Guzar Gaah-e-Mohabbat na Kushadah Hogi
Justujoo Manzil-e-Janaa Ki Ziada Hogi

Dil K Jazbon Pay Andhere He Musallat Hon Gay
Chaandni Jab Na Sar-e-baam-e-Iradah Hogi

Ronaq-e-Mehfil-e-Baadah Hayi Hamare Dum Say
Hum Na Hon Gay Tou Kahan Mehfil-e-Badah Hogi

Jab talak Dhaanp Na Lay Chaadar-e-Aflaak Mujhe
Be-Libaasi Mere Paikar Ka Libadah Hogi

Ab  Agar Lout K Aaen Gay Bicharrne Walay
Koi Aagosh-e-Mohabbat Na Kushadah Hogi

Meri  Masoom Nazar Dhoond Rahi Hai Us Ko
Koi Larki Tou Bharay Shehar Mein Sadah Hogi ,, ..


Please Do Click g+1 Button If You Liked The Post  & Share It

Friday, 23 August 2013

Aur Kia Karta Bayan-e-Gham Tumhare Samney .. ..

Purnam Tumhare Samne


اور کیا کرتا بیان ِ غم تمہارے سامنے
میری آنکھیں ہو گئیں پُرنم تمہارے سامنے

ہم جدائی میں تمہاری مر بھی سکتے ہیں مگر
چاہتے یہ ہیں کہ نکلے دم تمہارے سامنے

پھر خدا کی ذات سے کیوں کر تمہیں انکار ھے
ھے اگر تنظیم ِ دوعالم تمہارے سامنے

یہ ملال ِ موسم ِ رفتہ ھے آخر کس لیے
مُسکراتا ھے نیا موسم تمہارے سامنے

جس میں ہم دونوں کے بچپن کی بھی اِک تصویر ھے
ڈھونڈ کر لایا ہوں وہ البم تمہارے سامنے

آتے آتے لب پہ رہ جاتی ہیں دل کی حسرتیں
کھولتے ہیں ہم زباں کم کم تمہارے سامنے

تُم سمندر کی طرح آغوش وا کرتے نہیں
ہم تو بن جاتے ہیں موج ِ یم تمہارے سامنے

کس لیے تُم نیند میں شرما رہے ہو اِس طرح
خواب میں کیا آ گئے ہیں ہم تمہارے سامنے

تُم نے اپنے قد کا اندازہ لگایا ھے غلط
ھے اگر قامت ہماری کم تمہارے سامنے

یہ دلیل ِ گریہء موج ِ صبا یاور نہ ہو
 . . . ھے گُل ِ تازہ پہ جو شبنم تمہارے سامنے

Aur Kiya Karta Bayaan-e-Gham Tumhare Saamne
Meri Aankhen Ho Gayi Purnam Tumhaare Saamne

Hum Judaai Mein Tumhari Mar Bhi Sakte Hain Magar
Chaahate Yeh Hain K Nikle Dum Tumhare Saamne

Phir Khuda Ki Zaat Se Kiun Kar Tumeh Inkaar Hai
Hai Agar Taazeem-e-Dou Aalam Tumhare Saamne

Yeh Malal-e-Mosam-e-Rafta Hai Aakhir Kis Liyeh
Mukurata Hai Naya Mosam Tumhare Saamne

Jiss Mein Hum Donoon K Bachpan Ki Bhi Ik Tasveer Hai
Dhoondh Kar Laya Hoon Woh Album Tumhare Saamne

Aatay Aatay Lab Pay Reh Jati Hein Dil Ki Hasratein
Kholtay Hein Hum Zubaan Kam Kam  Tumhare Saamne

Tum Samundar Ki Aaghosh wa Karte Nahi
Hum To Ban Jaate Hain Mauj-e-YAM Tumhare Saamne

Kiss Liye Tum Neend Mein Sharma Rahe Ho Is Tarah
Khuwaab Mein Kiya Aa Gaye Hain Hum Tumhare Saamne

Tum Ne Apne Qad Ka Andaza Lagaya Hai Galat
Hai Agar Qaamat Hamari Kam Tumhare Saamne

Yeh Daleel-e-Garya-e-Mouj-e-Saba Yaawar Na Ho
Hai Gul-e-Tazah Pay Jo Shabnum Tumhare Saamne...


Please Do Click g+1 Button If You Liked The Post  & Share It


Thursday, 22 August 2013

Zakhm Dil K Naqaab Kholen Gay......

Dil Ki Kitaab

    زخم دل کے نقاب کھولیں گے 
    وحشتوں کے عذاب کھولیں گے

    حرف سارے  ہمیں پکاریں گے
    جب وہ دل کی کتاب  کھولیں گے 

کیا تمنا رہی ,  ملا  کیا  کیا
زندگی کا حساب کھولیں گے

    فکر کیوں ہو ہمیں  مسافت کی
    راستے خود سراب کھولیں گے 

    بھولنے  کو  غم _محبت  کو
    ہم  شرابی  شراب  کھولیں  گے

    لاکھ  گزرو نظر  بچا  کہ  تم 
    بھید  تیرا  گلاب  کھولیں گے 

راز دل کے سدا لکھو نہ  یوں
....لوگ جی بھر عتاب  کھولیں گے

  
Zakhm Dil K Naqaab Kholen Gay
Wehshato'n K Azaab Kholen Gay

Harf Saaray Humein Pukaaren Ge
Jab Woh Dil Ki Kitaab Kholen Gay

Kiya Tammana Rahi, Mila Kiya Kiya
Zindagi Ka Hisaab Kholen Gay

Fikar Kiun Ho Humein Musafat Ki
Raastay Khud Saraab Kholen Gay

Bhoolnay Ko Gham-e-Muhabbat Ko
Hum Sharaabi Sharaab Kholen Gay

Laakh Guzro Nazar Bacha K Tum
Bhaid Tera Gulaab Kholen Gay

Raaz Dil K Sada Likho Na Youn
Log Ji Bhar Utaab Kholen Gay…


Please Do Click g+1 Button If You Liked The Post  & Share It

Wednesday, 21 August 2013

Nadi Ka Paani Behta Ja Raha Hai...

Aanchal Tera Lehra

ندی 
 کا  پانی  بہتا  جا  رہا  ہے
یا  پھر  آنچل  تیرا  لہرا  رہا ہے

فضا میں کیسی ہے خوشبو سی پھیلی
وہ شا ئد مجھکو سوچے جا رہا ہے

میری آنکھوں میں پتے اڑ رہے ہیں
کوئ پت جھڑ کا موسم آ رہا ہے

سنا ہے رات بھر روتا رہا وہ
ادھر بھی ایک سناٹا رہا ہے

عجب ہیں تیری دنیا کے یہ میلے
یہاں ہر شخص ہی تنہا رہا ہے

بہت ویران ہیں یہ دل کی گلیاں
یہاں اک شور سا برپا رہا ہے

وہ کوئ عجنبی خوشبو کا جھونکا
میر ا سارا  بدن  مہکا  رہا  ہے

کوئ روٹھا ہے کچھ یوں مجھ سے
زمانہ مجھ سے روٹھا جا رہا ہے۔۔۔۔


Nadi Ka Paani Behta Ja Raha Hai
Ya Phir Aanchal Tera Lehra Raha Hai

Faza Mein Kaisi Hai Khushbu Si Phaili
Woh Shaayad Mujh Ko Soche Ja Raha Hai

Meri Aankhon Mein Pattay Urr Rahe Hain
Koi Patt-Jharr Ka Mausam Aa Raha Hai

Suna Hai Raat Bhar Rota Raha Woh
Idhar Bhii Aik Sanna'ta Raha Hai

Ajab Hain Teri Duniya K Yeh Mailey
Yahaan Har Shakhs He Tanha Raha Hai

Bohat Veeran Hain Yeh Dil Ki Galyaa'n
Yahaan Ik Shor Sa Barpaa Raha Hai

Woh Koi Ajnabi Khushbu Ka Jhoonka
Mera Sara Badan Mehka Raha Hai

Koi Rootha Hai Kuch Youn Mujh Se
Zamaana Mujh Se Rootha Ja Raha Hai...


 Please Do Click g+1 Button If You Liked The Post  & Share It