Tuesday, 30 April 2013

Khatam Apni Chahaton Ka Silsila Kese Hua...??

Mujhse Juda Kese

ختم اپنی چاہتوں کا سلسلہ کیسے ہوا
تو تو مجھ میں جذب تھا مجھ سے جدا کیسے ہوا

وہ جو تیرے اور میرے درمیاں ایک بات تھی
آئو سوچیں شہر اسے آشنا کیسے ہوا

چب گئیں سینے میں ٹوٹی خواہشوں کی کرچیاں
کیا لکھوں دل ٹوٹنے کا حادثہ کیسے ہوا

جو رگِ جاں تھا کبھی ملتا ہے اب رخ پھیر کر
سوچتا ہوں اس قدر وہ بے وفا کیسے ہوا


Khatam Apni Chahaton Ka Silsila Kese Hua
Tu Tou Mujh Mein Jazb Tha, Mujhse Juda Kese Hua..?

Woh Jo Tere or Mere Darmiyan, Ik Baat Thi
Aao Sochein Shehar Is Se, Aashna Kese Hua.?

Chubh Gaee Seenay Mein Tooti Khuwahishon Ki Kirchiyan
Kia Likhon Dil Tootne Ka Haadsa Kese Hua..?

Jo Rag-e-Jaan Tha Kabhi Milta Hai Ab Rukh Phiar Kar
Sochta Hoon Is Qadar Woh Bewafa Kese Hua....?? 


 Please Do Click g+1 Button If You Liked The Post  & Share It

Tumeh Nikaal Kar Dekha Tou Sab Khasara Hai...............

Sab Khasara Hai

حسابِ عمر کا اتنا سا گوشوارا ہے
تمہیں نکال کے دیکھا تو سب خسارا ہے

کسی چراغ میں ہم ہیں کسی کنول میں تم
کہیں جمال ہمارا کہیں تمہارا ہے

وہ کیا وصال کا لمحہ تھا جس کے نشے میں
تمام عمر کی فرقت ہمیں گوارا ہے

ہر اک صدا جو ہمیں بازگشت لگتی ہے
نجانے ہم ہیں دوبارہ کہ یہ دوبارہ ہے

وہ منکشف مری آنکھوں میں ہو کہ جلوے میں
ہر ایک حُسن کسی حُسن کا اشارہ ہے

عجب اصول ہیں اس کاروبارِ دُنیا کے
کسی کا قرض کسی اور نے اُتارا ہے

نجانے کب تھا! کہاں تھا مگر یہ لگتا ہے
یہ وقت پہلے بھی ہم نے کبھی گزارا ہے

یہ دو کنارے تو دریا کے ہو گئے ، ہم تم
مگر وہ کون ہے جو تیسرا کنارا ہے



Hisab-e-Umr Ka Itna Sa Goshwara Hai
Tumeh Nikaal Kar Dekha Tou Sab Khasara Hai

Kisi Charaag Mein Hum Hein, Kisi Kanwal  Mein Tum
Kaheen Jamaal Tumhara, Kaheen Hamara Hai

Woh Kia Visaal Ka Lamha Tha,  Jis K Nashay Mein
 Tamaam Umr Ki Furqat Hame Gawara Hai

Har Ik Sada Jo Hame Baazgasht  Lagti Hai
Na Jane Hum Hein Dobara  K, Yeh Dobara Hai

Woh Munkashif Meri Aankhon Mein Ho, K Jalway Mein
Har Aik Husn , Kisi Husn Ka Ishara Hai

Ajab Usool Hein Is Kaarobar-e-Dunya K
Kisi Ka Qarz , Kisi Aur Ne Utara Hai

Na Jane Kab Tha Kahan Tha, Magar Yeh Lagta Hai
Yeh Waqt Pehle Bhi Hum Ne Kaheen Guzara Hai

Yeh Do Kinare Tou Darya K Hogaey, Hum Tum
Magar Woh Kon Hai Jo Teesra Kinara Hai..................


 Please Do Click g+1 Button If You Liked The Post  & Share It

Har Taraf Insabaat Hai Ay Dil...........


Ghar Mein Raat

ہر  طرف  انبساط ہے اے دل
اور ترے گھر میں رات ہے اے دل

عشق ان ظالموں کی دنیا میں
کتنی مظلوم ذات ہے اے دل

میری حالت کا پوچھنا ہی کیا
سب ترا  التفات ہے  اے  دل

اس طرح آنسوؤں کو ضائع نہ کر
آنسوؤں  میں  حیات  ہے  اے  دل

اور  بیدار  چل  کہ  یہ  دنیا
شاطروں  کی  بساط ہے اے  دل

صرف اُس نے نہیں دیا مجھے سوز
اس  میں تیرا  بھی  ہاتھ ہے اے دل

مُندمل  ہو  نہ  جائے  زخمِ  دروں
یہ  مری  کائنات  ہے  اے  دل

حُسن کا ایک وار سہہ نہ سکا
ڈوب  مرنے کی بات ہے  اے  دل

Har Taraf Insabaat Hai, Ay Dil
Aur Tere Ghar Mein Raat Hai, Ay Dil

Ishq In Zaalimon Ki Dunya Mein
Kitni Mazloom Zaat Hai, Ay Dil

Meri Halat Ka Poochna HE Kia
Sab Tere Iltafaat Hai, Ay Dil

Is Tarha Aansoun Ko Zaya Na Kar
Aansoun Mein Hayaat Hai, Ay Dil

Aur Bedaar Chal K Yeh Dunya
Shaatiron Ki Bisaat Hai, Ay Dil

Sirf Us Ne Nahi Diya Mujhe Soz
Is Mein Tera Bhi Haath Hai, Ay Dil

Mundamil Ho Na Jaey Zakhm-e-Daroon
Yeh Meri Kainaat Hai, Ay Dil

Husn Ka Aik Waar Seh Na Saka
Doob Marne Ki Baat Hai Ay Dil.........


 Please Do Click g+1 Button If You Liked The Post  & Share It


Sunday, 28 April 2013

Aanchal Teri Yaadon Ka Bhigo Deti Hai Baarish..........


Bhigo Deti Hai Barish

آنچل تیری یادوں کا بھگو دیتی ہے بارش
سوچوں پہ جمی گرد کو دھو دیتی ہے بارش

ہنس ہنس کے سناتی ہے جہاں بھر کے فسانے
پوچھوں تیرے بارے میں تو رو دیتی ہے بارش

یادوں کی مہک ہو یا تیرے ہجر کے طعنے
چپ چاپ میں رکھ لیتا ہوں،جو دیتی ہے بارش

مجھ پر تو جو کرتی ہے سو کرتی ہے عنایت
موتی تیرے بالوں میں پرو دیتی ہے بارش......

Aanchal Teri Yaadon Ka Bhigo Deti Hai Barisha
Sochon Pe Jami Gard Ko, Dho Deti Hai Baarish

Hans Hans K Sunati Hai, Jahan Bhar K Fasane
Poochon Tere Bare Mein, Tou Ro Deti Hai Baarish

Yaadon Ki Mehak Ho Ya Tere Hijr K Taanay
Chup Chaap Mein Rakh Leta Hoon , Jo Deti Hai Baarish

Mujh Par Tou Jo Karti Hai, So Karti Hai Inayat
...............Moti Tere Baalon Mein Piro Deti Hai Baarish


 Please Do Click g+1 Button If You Liked The Post  & Share It


Andheri Raat Hai, Rasta Sujhaie De Tou Chalen...


Koi Kiran Jugnoo


اندھیری رات ہے، رستہ سجھائی دے تو چلیں
کوئی کرن، کوئی جگنو دکھائی دے تو چلیں

رکے ہیں یوں تو سلاسل پڑے ہیں پاؤں میں
زمین بندِ وفا سے رہائی دے تو چلیں

سفر پہ نکلیں مگر سمت کی خبر تو ملے
سرِ فلک کوئی تارا دکھائی دے تو چلیں

دیارِ گل سے تہی دست کس طرح جائیں
کوئی یہاں بھی غم آشنائی دے تو چلیں

ابھی تو سر پہ کڑی دوپہر کا پہرہ ہے
شفق زمین کو رنگِ حنائی دے تو چلیں

کسی طرف سے تو کوئی بلاوا آ جائے
کوئی صدا سرِ محشر سنائی دے تو چلیں


Andheri Raat Hai, Rasta Sujhaie De Tou Chalen
Koi Kiran, Koi Jugnoo Dikhaie De Tou Chalen

Rukay Hein Tou Sala-sal Parray Hein Paaon Mein
Zameen Band-e-Wafa Se , Rehaie De Tou Chalen

Safar Pe Niklen Magar, Simt Ki Khabar Tou Milay
Sar-e-Falak Koi Tara, Dikhaie De Tou Chalen

Diyar-e-Gul Se Teh-e-Dast Kis Tarhan Jaen
Koi Yahan Bhi Gham-e-Aashnaie De Tou Chalen

Abhi Sar Par Karri Dopehar Ka Pehra Hai
Shafaq Zameen Ko Rang-e-Hinaie De Tou Chalen

Kisi Taraf Se Tou Koi Bulawa Ajaey
Koi Sada Sar-e-Mehshar Sunaie De Tou Chalen...


 Please Do Click g+1 Button If You Liked The Post  & Share It


Rehguzar K Charaag Hein Hum Log..........


Aap Apna Suraag


رہ گزر کے چراغ ہیں ہم لوگ
آپ اپنا سراغ ہیں ہم لوگ

جل رہےہیں نہ بجھ رہےہیں دوست
کس کےسینے کا داغ ہیں ہم لوگ

خود تہی ہیں مگر پلاتے ہیں
مے کدے کا ایاغ ہیں ہم لوگ

دشمنوں کو بھی دوست کہتےہیں
کتنے عالی دماغ ہیں ہم لوگ

چشم تحقیر سے نہ دیکھ ہمیں
دامنوں کا فراغ ہیں ہم لوگ

ایک جھونکا نصیب ہے ساغر
اس گلی کے چراغ ہیں ہم لوگ



Rehguzar K Charaag Hein Hum Log 
Aap Apna Suraag Hein Hum Log

Jal Rahe Hein, Na Bujh Rahe Hein Dost
Kisi K Seenay Ka Daag Hein Hum Log

Khud Tehee Hai, Magar Pilatey Hein
May-Kaday Ka Ayaag Hein Hum Log

Dushmano Ko Bhi Dost Kehte Hein
Kitne Aali Dimaag Hein Hum Log

Chashm-E-Tehqeer Se Na Dekh Hame
Daamano Ka Firaag Hein Hum Log

Aik Jhonka Naseeb Hai Sagar    
Us Gali K Charaag Hein Hum Log....




 Please Do Click g+1 Button If You Liked The Post  & Share It

Woh Sooraj Tha , Sitara Ho Gaya Na...


Sitara Ho Gaya

وہ سورج تھا ستارہ ہوگیا ناں
جداُئی کا اشارہ ہوگیا ناں

سکھایا تھا جسے دنیا میں جینا
وہی دنیا کو پیارا ہوگیا ناں

کہا بھی تھا محبت تم نہ کرنا
خسارہ ہی خسارہ ہوگیا ناں

بہت ہی دوُر اپنی دسترس سے
رفاقت کا کنارہ ہوگیا ناں۔ ۔ ۔

Woh Sooraj Tha , Sitara Ho Gaya Na
Judai Ka Ishara Ho Gaya Na

Sikhaya Tha Jisay Dunya Mein Jeena
Wohi Dunya Ko Piyara Ho Gaya Na

Kaha Bhi Tha Mohabbat Tum Na Karna
Khasara He Khasara Ho Gaya Na

Bohat He Door Apni Dastaras Se
Rafaqat Ka Kinara Ho Gaya Na.....
  


 Please Do Click g+1 Button If You Liked The Post  & Share It

Khushboun Ki Barish Thi, Chaandni Ka Pehra Tha

Teri Jheel Aankhon


خوشبوؤں کی بارش تھی، چاندنی کا پہرہ تھا
میں بھی اُس شبستاں میں ایک رات ٹھہرا تھا

تو مری مسیحائی جان! کس طرح کرتا
تیری جھیل آنکھوںسے میرا زخم گہرا تھا

میں نے اس زمانے میں تیرے گیت گائے ہیں
تیرا نام لینا بھی جب گناہ ٹھہرا تھا

اس گھڑی نبھایا تھا اس نے وصل کا وعدہ
جب تمام رستوں پر چاندنی کا پہرہ تھا

رنگ یاد ہے اس کا شام کے دھندلکے میں
آنسوؤں سے تر چہرہ کس قدر سنہرا تھا
Khushboun Ki Baarish Thi, Chaandni Ka Pehra Tha
Mein Bhi Us Shabistaan Mein, Aik Raat Thehra Tha

Tu Meri Masihaaie Jan , Kis Tarha Karta
Teri Jheel Aankhon Se, Mera Zakhm Gehra Tha

Mein Ne Us Zamane Mein , Tere Geet Gaey Thay
Tera Naam Lena Bhi, Jab Gunah Thehra Tha

Us Gharri Nibhaya Tha , Usne Visl Ka Wada
Jab Tamaam Raston Par Chaandni Ka Pehra Tha

Rung Yaad Hai Uska, Shaam K Dhundalkay Mein
Aansoun Se Tar Chehra, Kis Qadar Sunehra Tha....



 Please Do Click g+1 Button If You Liked The Post  & Share It

Ab Yeh Bhi Nahi Yaad K Kia Naam Tha USka........

Jis Shakhs Ko


ﺍﺏ ﯾﮧ ﺑﮭﯽ ﻧﮩﯿﮟ ﯾﺎﺩ ﮐﮧ ﮐﯿﺎ ﻧﺎﻡ ﺗﮭﺎ ﺍﺱ ﮐﺎ
ﺟﺲ ﺷﺨﺺ ﮐﻮ ﻣﺎﻧﮕﺎ ﺗﮭﺎ ﻣﻨﺎﺟﺎﺕ ﮐﯽ ﻣﺎﻧﻨﺪ

ﮐﺲ ﺩﺭﺟﮧ ﻣﻘﺪﺱ ﮨﮯ ﺗﯿﺮﮮ ﻗﺮﺏ ﮐﯽ ﺧﻮﺍﮨﺶ
ﻣﻌﺼﻮﻡ ﺳﮯ ﺑﭽﮯ ﮐﮯ ﺧﯿﺎﻻﺕ ﮐﯽ ﻣﺎﻧﻨﺪ

ﺍﺱ ﺷﺨﺺ ﺳﮯ ﻣﻠﻨﺎ ﻣﯿﺮﺍ ﻣﻤﮑﻦ ﮨﯽ ﻧﮩﯿﮟ ﺗﮭﺎ
 ﻣﯿﮟ ﭘﯿﺎﺱ ﮐﺎ ﺻﺤﺮﺍ ﮨﻮﮞ ﻭﮦ ﺑﺮﺳﺎﺕ ﮐﯽ ﻣﺎﻧﻨﺪ

"ﻣﺤﺴﻦ " ﺍﺳﮯ ﺳﻤﺠﮭﺎﻭ ﮐﮧ ﺍﺏ ﺭﺣﻢ ﮐﺮﮮ ﻭﮦ
ﺩﮐﮫ ﺑﺎﻧﭩﺘﺎ ﭘﮭﺮﺗﺎ ﮨﮯ ﻭﮦ ﺳﻮﻏﺎﺕ ﮐﯽ ﻣﺎﻧﻨﺪ ۔۔۔۔۔


Ab Yeh Bhi Nahi Yaad K, Kia Naam Tha Uska
Jis Shkahs Ko Manga Tha , Manajaat Ki Maanind

Kis Darja Muqaddas Hai Tere Qurb Ki Khuwahish
Masoom Say Bachay K Khayalaat Ki Maanind

Us Shakhs Se Milna Mera, Mumkin He Nahi Tha
Mein Piyaas Ka Sehra Hoon, Woh Barsaat Ki Maanind

Mohsin Usay Samjhao K Ab Reham Kare Woh
Dukh Baant’ta Phirta Hai Woh Sogaat Ki Maanind...



 Please Do Click g+1 Button If You Liked The Post  & Share It

Barri Nazuk Hai Mohabbat Ki Larri rehne De


Mohabbat Ki Larri

بڑی نازک ہے محبت کی لڑی رہنے دے
درمیان ایک تعلق کی کڑی رہنے دے

ساعتِ وصل کو لے آ مری آنکھوں کی طرف
ساعتِ ھجر مرے دل میں گڑی رہنے دے

رنگ و روغن نہ کھُرچ اب مُجھے ایسے نہ کُرید
میرے پتھر پہ کوئی یاد جڑی رہنے دے

آ گِرا دیتے ہیں امکان کی چھت کو لیکن
ایک دیوار یقیں کی تو کھڑی رہنے دے

روک لے ایک گُزرتے ہُوئے لمحے کو یہیں
شے کوئی جیسے پڑی ہے وُہ پڑی رہنے دے

پتے واپس نہ لگا ایسے کہاں لگتے ہیں
شاخ کی بات نہ سُن شاخ جھڑی رہنے دے

تُو نے جانا ہے تو جا ایسے بہانے نہ بنا
نہ دِکھا اپنی کلائی پہ گھڑی رہنے دے

تیز رفتاری سے ہلکان تو پہلے بھی ہوں
نہ اُٹھا اور قیامت کی چھڑی رہنے دے


Barri Nazuk Hai Mohabbat Ki Larri Rehne De
Darmiyaan Aik Ta’alluq Ki Karri Rehne De

Sa’at-e-Visl  Ko Lay Aa Meri  Aankhon Ki Taraf
Sa’at-e-Hijr Mere Dil Mein Garri Rehne De

Rang-o-Rogan Na Khurruch, Ab Mujhe Aisay Na Kuraid
Mere Pathar Pay Koi Yaad Jurri Rehne De

Aa Gira Detey Hein Imkaan Ki Chatt Ko Lekin
Aik Diwaar Yaqeen Ki Tou Kharri Rehne De

Rok Lay Aik Guzarte Huey Lamhe Ko Yaheen
Shay Koi Jese Parri Hai Woh Parri Rehne De

Pattay Wapas Na Laga Aisay Kahan Lagte Hein
Shaakh Ki Baat Na Sun, Shaakh Jharri Rehne De

Tu Ne Jana Hai Tou Ja, Aisay Bahane Na Bana
Na Dikha Apni Kalaai Pe Gharri Rehne De

Taiz Raftari Se Halkaan Tou Pehle Bhi Hoon
Na Utha Or Qayamat Ki Charri Rehne De....




 Please Do Click g+1 Button If You Liked The Post  & Share It

Shamil Tha Yeh Sitam Bhi, Kisi K Naqaab Mein..........


Titli Mili Hunoot

شامِل تھا یہ سِتم بھی کسی کے نصاب میں
تِتلی ملی حنُوط پُرانی کتاب میں

دیکھوں گا کِس طرح سے کسی کو عذاب میں
سب کے گناہ ڈال دے میرے حساب میں

پھر بے وفا کو بحرِ محبت سمجھ لیا
پھر دل کی ناؤ ڈُوب گئی ہے سرَاب میں

پہلے گلاب اُس میں دِکھائی دیا مجھے
اب وہ مجھے دِکھائی دیا ہے گلاب میں

وہ رنگِ آتشیں، وہ دہکتا ہوا شباب
چہرے نے جیسے آگ لگا دی نقاب میں

بارش نے اپنا عکس کہیں دیکھنا نہ ہو
کیوں آئینے اُبھرنے لگے ہیں حباب میں

گردش کی تیزیوں نے اُسے نُور کر دیا
مٹی چمک رہی ہے یہی آفتاب میں

اُس سنگدل کو میں نے پکارا تو تھا عدیم
.....اپنی صدا ہی لوٹ کر آئی جواب میں

Shamil Tha Yeh Sitam Bhi Kisi K Nisaab Mein
Titli Mili Hunoot Puarni Kitaab Mein

Dekhon Ga Kis Tarha Se Kisi Ko Azaab Mein
Sab K Gunah Daal De Mere Hisaab Mein

Phir Be-Wafa  Ko Behr-e-Mohabbat Samajh Liya
Phir Dil Ki Naao Doob Gaee Hai Saraab Mein

Pehle Gulaab Us Mein Dikhaee Diya Mujhe
Ab Woh Mujhe Dikhai Diya Hai Gulaab Mein

Woh Rang-e-Aatasheen,Woh Dehakta Hua Shabaab
Chehre Ne Jese Aag,  Lagadi Naqaab Mein

Barish Ne Apna Aks, Kaheen Dekhna Na Ho
Kiun Aaeinay Ubharne Lage Hein Habaab Mein

Gardish Ki Taiziyon Ne Usay Noor Kar Diya
Matti Chamak Rahi Hai, Yehi Aaftaab Mein

Us Sangdil Ko Mein Ne Pukara Tou Tha Adeem
Apni Sada He Lout Kar Aaiee Jawab Mein.........


Please Do Click g+1 Button If You Liked The Post  & Share It